Monday , June 25 2018
Home / دنیا / چین : دہشت گردی کے 12 مجرمین کو سزائے موت

چین : دہشت گردی کے 12 مجرمین کو سزائے موت

بیجنگ ، 5 جون (سیاست ڈاٹ کام) چین کی فاسٹ ٹریک عدالتوں نے آج 81 افراد کو سزائیں سنائی جن میں 12 مجرمین کو سزائے موت شامل ہیں، اور شورش زدہ صوبہ سنکیانگ میں 29 دیگر افراد دہشت گردی سے متعلق جرائم کی پاداش میں گرفتار کرلیا گیا ہے، جو حالیہ سلسلہ وار حملوں کیلئے موردالزام اسلام پسند افراد کے خلاف ملک گیر سطح پر سخت کارروائی کا حصہ ہے۔ سرکار

بیجنگ ، 5 جون (سیاست ڈاٹ کام) چین کی فاسٹ ٹریک عدالتوں نے آج 81 افراد کو سزائیں سنائی جن میں 12 مجرمین کو سزائے موت شامل ہیں، اور شورش زدہ صوبہ سنکیانگ میں 29 دیگر افراد دہشت گردی سے متعلق جرائم کی پاداش میں گرفتار کرلیا گیا ہے، جو حالیہ سلسلہ وار حملوں کیلئے موردالزام اسلام پسند افراد کے خلاف ملک گیر سطح پر سخت کارروائی کا حصہ ہے۔ سرکاری ژنہوا نیوز ایجنسی کی اطلاع کے مطابق جہاں 9 عسکریت پسندوں کو موت کی سزاء سنائی گئی وہیں 3 دیگر کو 2 سالہ راحت کے ساتھ سزائے موت دی گئی۔ ان بڑی سزاؤں کے علاوہ سنکیانگ کے چھ شہروں کی مقامی عدالتوں نے دہشت گردی سے متعلق 23 کیسوں میں 69 دیگر ملزمین کو مجرم قرار دیا اور انہیں عمر قید سے لیکر مختلف مدت کی قید کی سزائیں سنائیں، علاقائی اعلیٰ عدالت نے یہ بات کہی۔

ان ملزمین کو جرائم کی منظم سازش اور ان پر عمل درآمد سے لے کر مختلف دیگر جرائم جیسے آتشزنی اور غیرقانونی اسلحہ کی تیاری، دھماکو مادے کو قبضہ میں رکھنا وغیرہ کا مجرم پایا گیا۔ دریں اثناء چینی عہدیداروں نے اعلان کیا ہے کہ مزید 29 افراد آج گرفتار کرلئے گئے جبکہ شمال مغربی علاقہ سنکیانگ میں انسداد دہشت گردی کارروائی ہنوز جاری ہے۔ قبل ازیں مسلم انتہا پسندوں نے کئی مہلک حملے کئے تھے جس کے بعد انسداد دہشت گردی کارروائی کا آغاز کیا گیا۔ شہریوں پر سنکیانگ میں اور اِس کے باہر دو شہروں میں بڑے پیمانے پر دو حملے کئے گئے۔ اِس کا الزام بھی اِس علاقہ کے مسلم انتہا پسندوں پر عائد کیا گیا ہے۔ کمیونسٹ پارٹی آف چائنا کے قائد صدر چین شی جنپنگ نے اِسے ایک بڑا صیانتی چیلنج قرار دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT