Sunday , September 23 2018
Home / دنیا / چین کیساتھ تجارتی خسارہ پر ہندوستان کو تشویش

چین کیساتھ تجارتی خسارہ پر ہندوستان کو تشویش

حکمت عملی اقتصادی مذاکرات فورم سے مونٹک سنگھ اہلوالیہ کا خطاب

حکمت عملی اقتصادی مذاکرات فورم سے مونٹک سنگھ اہلوالیہ کا خطاب
بیجنگ ۔ 18 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے سالانہ 35 بلین ارب امریکی ڈالر کے ناقابل برداشت خسارہ پر اپنی گہری تشویش سے آج چین کو باخبر کردیا۔ اس دوران دونوں ملکوں کے سرکردہ منصوبہ ساز تیز رفتار ٹرین چلانے کیلئے ہندوستانی ریلوے کی پٹریوں کی تجدید کاری کیلئے تعاون و اشتراک کی حکمت عملی کو قطعیت دے رہے ہیں۔ منصوبہ بندی کمیشن کے نائب صدرنشین مونٹک سنگھ اہلوالیہ نے بیجنگ میں حکمت عملی کے اقتصادی مذاکرات فورم کے تیسرے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’مجھے، اس مرحلہ پر یہ حوالہ دینا ضروری ہیکہ چین کے ساتھ ہماری تجارت میں بڑھتے ہوئے عدم توازن پر ہندوستان کو گہری تشویش ہے‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’تجارت باہمی تعاون کی نشاندہی کا ایک اہم عنصر ہے اور ہم اس تجارت میں ہونے والی نمایاں توسیع پرخوش ہیں۔

ہمیں امید ہیکہ 2015ء تک ہم باہمی تجارت میں 100 ارب ڈالر کا سرکاری نشانہ پورا کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ ہم اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ ہر دو ممالک کے درمیان تجارت متوازن نہیں ہوتی لیکن گذشتہ تین سال ہندوستان کا تجارتی خسارہ 35 ارب ڈالر سالانہ ہورہا ہے جو ناقابل برداشت ہے‘‘۔ مسٹر اہلوالیہ نے کہا کہ اس تجارتی خسارہ کو قابل برداشت سطح تک لانے کی ضرورت ہے۔ اس کیلئے ہندوستان سے چین کو ہندوستان سے برآمدات میں اضافہ کی ضرورت ہوگی اور چین کو ہندوستان میں تعمیری و تیاری صلاحیتوں کو فروغ دینا ہوگا جو فی الحال ہندوستان اپنے پڑوسی ملک سے درآمد کرتا ہے۔ مذاکرات کے اختتام پر جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ ریلوے میں دونوں ملکوں نے تعاون کے فروغ سے اتفاق کیا اور ہندوستانی ریلوے نظام میں تیز رفتار ٹرین چلانے کیلئے چین نے ممکنہ تعاون کی پیشکش کی ۔

TOPPOPULARRECENT