Tuesday , August 14 2018
Home / ہندوستان / چین کی سرحد سے متصل علاقوں میں فوجی نقل و حرکت میں تیزی

چین کی سرحد سے متصل علاقوں میں فوجی نقل و حرکت میں تیزی

ہندوستانی فوج کی بروقت رسائی کے لیے سڑکوں اور انفراسٹرکچر کی تعمیر کا فیصلہ
نئی دہلی۔23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ڈوکلم کے 73 روزہ طویل تعطل کے پس منظر میں فوج نے چین۔ہند سرحد سے متصل علاقوں میں سڑکوں کی تعمیر اور انفراسٹرکچر کی فراہمی کے لیے غیرمعمولی اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہنگامی صورت میں ہندوستانی فوج کو چین سے متصل سرحد تک پہونچنے کے لیے کشادہ سڑکوں اور انفراسٹرکچر کو فروغ دیا جائے گا۔ جب کبھی ضرورت ہو فوج آسانی سے اس علاقہ تک تیزی کے ساتھ رسائی حاصل کرسکے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق فوج کے شعبہ انجینئرس نے پہلے ہی سلسلہ وار کاموں کا آغاز کیا ہے۔ ان پہاڑی علاقوں کی کٹوائی کے لیے مختلف اوزار کی طلبی کے احکامات اور سڑکوں کو بچھانے کے لیے مشین لانے اور دیگر اکیوپمینٹ کو تعینات کیا جائے گا۔ ان اشیاء کے علاوہ فوج نے فوج کی تیزی سے نقل و حرکت کے لیے حملہ کرنے والے ٹریکس بھی حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع نے مزید کہا کہ فوجی ہیڈکواٹرس نے 1000 ڈیول ٹریکس کا آرڈر دیا ہے کہ زیر زمین سرنگوں کا پتہ چلانے میں مدد مل سکے۔ زیر زمین سرنگوں کا پتہ چلانے کی بھی فوجی انجینئرس کو ماہر بنایا جارہا ہے۔ زائد از 100 اگزیکٹیوس کو بھی حاصل کیا جارہا ہے جو عصری نوعیت کے آلات سے آراستہ ہوں گے اس علاقہ میں 50 مختصر فاصلے کے بریجس تعمیر کئے جائیں گے۔ ہندوستان اور چین کے درمیان 4000 کیلومیٹر طویل سرحد ہے جہاں 237 سال قدیم سی او ای کی جانب سے اہم جنگی انجینئرنگ کی حمایت میں اہم سرحدی علاقوں میں رابطہ کاری کو برقرار رکھا جائے گا۔ اس منصوبہ کے مطابق فوجی انجینئرس ابتداء میں پہاڑی علاقوں میں سڑکیں تیار کریں گے بعد ازاں اگر ضروری ہوا تو فوجی انجینئرس سرحدی سڑکوں کی تنظیم کو مضبوط بنائیں گے۔ سال 2005 ء میں بارڈر روز آرگنائزیشن نے 73 سڑکیں تعمیر کرنے کے لیے زور دیا گیا اور ہند۔چین سرحد سے متصل اہم علاقوں پر واقع خاص مقامات میں سڑکوں کی تعمیر کو ضروری قرار دیا گیا تھا لیکن اس پراجیکٹ کی عمل آوری میں غیر معمولی تاخیر ہوئی۔ اس سے فوج ناخوش تھی۔ اب فوج کے لیے انفراسٹرکچر کو فروغ دیا جارہا ہے اور حساس سرحدی علاقوں پر کام ہورہا ہے۔ حکومت کی مجموعی حکمت عملی یہی ہے کہ مسلح افواج کو جنگ کے لیے ہمیشہ تیار رکھا جائے۔

TOPPOPULARRECENT