Thursday , September 20 2018
Home / دنیا / چین کی فضائی ٹریفک فوجی مشقوں سے متاثر، فوج کے احتیاطی اقدامات

چین کی فضائی ٹریفک فوجی مشقوں سے متاثر، فوج کے احتیاطی اقدامات

بیجنگ۔ 27؍جولائی (سیاست ڈاٹ کام)۔ چین کی جنوب مشرقی ساحلی علاقوں میں جنگی مشقوں اور مشرقی بحر چین میں حقیقی فائرنگ کی مشقوں کے نتیجہ میں فضائی ٹریفک کے لئے سنگین اندیشے پیدا ہوگئے ہیں، کیونکہ اگر کوئی طیارہ جس میں سینکڑوں مسافر سوار ہوں، فائرنگ کی زد میں آجائے تو ان سب کی جانوں کے لئے خطرہ پیدا ہوسکتا ہے۔ جنوب مشرقی چین میں 29 جولائی

بیجنگ۔ 27؍جولائی (سیاست ڈاٹ کام)۔ چین کی جنوب مشرقی ساحلی علاقوں میں جنگی مشقوں اور مشرقی بحر چین میں حقیقی فائرنگ کی مشقوں کے نتیجہ میں فضائی ٹریفک کے لئے سنگین اندیشے پیدا ہوگئے ہیں، کیونکہ اگر کوئی طیارہ جس میں سینکڑوں مسافر سوار ہوں، فائرنگ کی زد میں آجائے تو ان سب کی جانوں کے لئے خطرہ پیدا ہوسکتا ہے۔ جنوب مشرقی چین میں 29 جولائی سے چینی فوج کی جنگی مشقوں کا آغاز ہوجائے گا۔ وزارت قومی دفاع نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ یہ مشقیں انتہائی اہمیت رکھتی ہیں، کیونکہ ان سے ملک کی لڑاکا صلاحیت کی جانچ ہوتی اور حقیقی لڑاکا تربیت کی سطح اور فوجی تیاریوں کی سطح میں اضافہ ہوتا ہے۔ فوجی اور شہری ہوابازی انتظامیہ عہدیداروں نے جنگی مشقوں کا پروازوں پر اقل ترین اثر ہونے کو یقینی بنایا ہے۔ عارضی فضائی راستے کھول دیئے گئے ہیں اور محفوظ فضائی حدود کا اعلان کردیا گیا ہے۔ پرواز کے راستوں میں تبدیلی کا بھی اعلان کیا گیا ہے۔ فوجی مشقوں کا شہری ہوابازی پر محدود اثر مرتب ہونے کا امکان ہے۔ فوج کے بیان میں کہا گیا ہے کہ حالیہ پروازوں میں تاخیر کی وجہ مجوزہ فوجی مشقیں نہیں ہیں بلکہ موسمی حالات کی وجہ سے پروازوں میں تاخیر ہوئی ہے۔ مسلح افواج اپنی فوجی سرگرمیوں میں کمی کرتے ہوئے حالیہ برسوں میں شہری ہوابازی کو ان سے متاثر نہ ہونے دینے کے لئے مسلسل کوشاں رہی ہے۔ سرکاری خبر رساں ادارہ ’ژنہوا‘ کے بموجب فوج کا یہ بیان حقیقی فائرنگ کی جنگی مشقیں آئندہ ہفتہ پانچ روز تک مشرقی بحر چین میں منعقد کرنے کے اعلان کے بعد منظر عام پر آیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT