Wednesday , December 12 2018

چین کی فوج میں ترقیاں تندرستی سے مربوط

بیجنگ۔ 15؍فروری (سیاست ڈاٹ کام)۔ چین نے اپنے 23 لاکھ فوجیوں کی تندرستی کی مہم میں شدت پیدا کرتے ہوئے فوج میں ترقیات کو تندرستی سے مربوط کردیا ہے۔ پیپلز لبریشن آرمی کے ارکان کو یاددہانی کی گئی ہے کہ ان کی تندرستی برقرار رہنا چاہئے، بصورتِ دیگر انھیں ترقیوں سے محروم کردیا جائے گا۔ قومی دفاعی یونیورسٹی کے ماہر لی ڈاگوانگ نے کہا کہ زمان

بیجنگ۔ 15؍فروری (سیاست ڈاٹ کام)۔ چین نے اپنے 23 لاکھ فوجیوں کی تندرستی کی مہم میں شدت پیدا کرتے ہوئے فوج میں ترقیات کو تندرستی سے مربوط کردیا ہے۔ پیپلز لبریشن آرمی کے ارکان کو یاددہانی کی گئی ہے کہ ان کی تندرستی برقرار رہنا چاہئے، بصورتِ دیگر انھیں ترقیوں سے محروم کردیا جائے گا۔ قومی دفاعی یونیورسٹی کے ماہر لی ڈاگوانگ نے کہا کہ زمانۂ امن میں فوجیوں کا وزن زیادہ ہوجاتا ہے۔ سرکاری خبر رساں ادارہ ژنہوا کی اطلاع کے بموجب چینی فوج نے گزشتہ 30 سال سے کوئی جنگ نہیں کی۔ لی نے کہا کہ بہتر معیار زندگی کی وجہ سے طرز زندگی اور غذائی عادات میں بھی تبدیلی آگئی ہے۔ فوجی آرامدہ زندگی گزار رہے ہیں اور ان کے وزن میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔ وزن میں اضافہ سے نہ صرف فوجیوں کی شبیہہ متاثر ہوگی بلکہ میدانِ جنگ میں ان کی کارکردگی بھی متاثر ہوسکتی ہے اور بحیثیت مجموعی ان کی جنگ کرنے کی صلاحیت بھی متاثر ہونے کا اندیشہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT