Sunday , July 22 2018
Home / دنیا / چین ۔ پاکستان معاشی راہداری میں تیز رفتاری کا مشورہ

چین ۔ پاکستان معاشی راہداری میں تیز رفتاری کا مشورہ

صدر چین ژی جن پنگ نے پاکستان ۔ چین دوستی کو صدابہار قرار دیا
بیجنگ ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) چین ۔ پاکستان معاشی راہداری (سی پی ای سی) میں تیز رفتاری پیدا کرنے کا صدر چین ژی جن پنگ نے آج وزیراعظم پاکستان شاہدخاقان عباسی کو مشورہ دیا تاکہ دونوں ممالک کے تعلقات میں استحکام کے ذریعہ وہ علاقائی امن اور استحکام کا ستون بن سکیں۔ بی او اے او فورم برائے ایشیاء کی کانفرنس میں علحدہ طور پر جنوبی چین کے شہر دواؤ میں وزیراعظم پاکستان سے صدر چین نے علحدہ طور پر ملاقات کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کو باہمی تعاون سے شروع کئے جانے والے پراجکٹس جیسے سی پی ای سی کیلئے ٹھوس منصوبہ بندی کرنی چاہئے اور انفراسٹرکچر کی تعمیر جیسے گوادر بندرگاہ، برقی توانائی اور صنعتی پارکس کے قیام میں تیز رفتاری پیدا کرنی چاہئے۔ متنازعہ 50 ارب امریکی ڈالر مالیتی ہند ۔ پاک معاشی راہداری چین کو مسلم غالب آبادی والے ملک پاکستان کی گوادر بندرگاہ سے مربوط کرے گی۔ ہندوستان نے اس معاشی راہداری پر اعتراض کرتے ہوئے کہا ہیکہ اس کی تعمیر پاکستانی مقبوضہ کشمیر کی سرزمین پر بھی ہورہی ہے۔ چین اور پاکستان کو اچھے پڑوسیوں جیسے تعلقات اور بین الاقوامی تعاون کیلئے دوسروں کیلئے ایک مثال قائم کرنا چاہئے۔ وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی فورم میں بحیثیت مہمان شرکت کررہے ہیں۔ صدر چین ژی جن پنگ نے کہا کہ چین اور اپکستان صدابہار دفاعی تعاون اور شراکت داری رکھتے ہیں جو نمایاں طور پر پیشرفت کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT