Sunday , July 22 2018
Home / شہر کی خبریں / چیکس کی تقسیم کیلئے کوئی شرائط نہیں ،مستحقین کے مسائل سے واقف کروانے پر ریاستی وزیر جوگو رامنا کا جواب

چیکس کی تقسیم کیلئے کوئی شرائط نہیں ،مستحقین کے مسائل سے واقف کروانے پر ریاستی وزیر جوگو رامنا کا جواب

شادی مبارک اسکیم

حیدرآباد۔ 14 مارچ (سیاست نیوز) ریاستی وزیر بی سی ویلفیر و جنگلات جوگو رامنا نے کہا کہ حکومت نے شادی مبارک اور کلیان لکشمی اسکیمات کے چیکس شادی سے قبل یا شادی کے دن ہی مستحقین تک پہونچانے کے احکامات جاری کئے ہیں۔ چیکس کی تقسیم کیلئے کوئی شرائط نہیں رکھی۔ ذرائع آمدنی کا جو پیمانہ نافذ کیا گیا ہے۔ اس پر عمل کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی گئی ہے۔ چیکس کی تقسیم میں مہینوں تاخیر کرنے یا چیکس کی معمولی غلطیوں کی درستگی کیلئے مہینوں تک وقت لگانے والے عہدیداروں کے خلاف کارروائی کرنے کا انتباہ دیا۔ آج اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران مختلف جماعتوں کے ارکان اسمبلی کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کا جواب دیتے ہوئے جوگو رامنا نے کہا کہ شادی مبارک اور کلیان لکشمی اسکیمات کے تحت 3.10 لاکھ درخواستیں وصول ہوئی تھیں جن میں 2 لاکھ 92 ہزار درخواستوں کی یکسوئی کردی گئی ہے۔ صرف 28 ہزار درخواستیں زیرالتواء ہیں جس کی بھی عاجلانہ طور پر یکسوئی کردی جائے گی۔ ارکان اسمبلی نے شکایت کی کہ درخواستوں کی تحقیقات کرانے والے عہدیدار ووٹر شناختی کارڈ کو قبول کرنے سے انکار کررہے ہیں۔ ذاتی گھر نہ ہونے گھر میں فریج اور اے سی ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے غریب عوام کو حکومت کی اس منفرد اسکیمات سے محروم کررہے ہیں اور چیکس شادی ہونے کے 8 تا 9 ماہ تاخیر سے دیئے جارہے ہیں۔ تاخیر سے دیئے جانے والے چیکس میں اگر کوئی غلطی ہورہی ہے تو اس کو درست کرنے کیلئے مزید 4 تا 6 ماہ مہلت لے رہے ہیں۔ ارکان اسمبلی نے بتایا کہ غریب عوام حکومت کے بھروسے قرض پر لڑکیوں کی شادیاں کررہے ہیں۔ چیکس کی تقسیم میں تاخیر کرنے سے عوام پر سود کا بوجھ عائد ہورہا ہے۔ وزیر بی سی ویلفیر نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر نے انسانی جذبہ کے تحت بلالحاظ مذہب و ملت اور ذات پاک تمام غریب لڑکیوں کو فائدہ پہونچانے کیلئے اس اسکیم کا آغاز کیا ہے۔ 51 ہزار روپئے سے شروع ہونے والی اسکیم 75 ہزار روپئے تک پہونچ گئی ہے۔ حکومت نے چیکس کی حوالگی کیلئے کوئی قاعدے قانون نہیں بنایا۔ شہری علاقوں میں رہنے والے عوام کی سالانہ آمدنی 2 لاکھ اور دیہی علاقوں میں رہنے والے عوام کی ڈیڑھ لاکھ سے کم آمدنی ہو تو ان کے لئے یہ اسکیم لاگو ہوتی ہے۔ اگر عہدیدار کوئی قواعد کے تحت غریب عوام کو پریشان کررہے ہیں تو ارکان اسمبلی ان (وزیر موصوف) سے شکایت کریں، ایسے عہدیداروں اور ملازمین کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT