Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / ڈاکٹر مسعود جعفری کی تصنیف لفظ لفظ تابندہ کا رسم اجراء

ڈاکٹر مسعود جعفری کی تصنیف لفظ لفظ تابندہ کا رسم اجراء

پروفیسرایس اے شکور، پروفیسر مجیدبیدار، پروفسیر رحمت یوسف زئی و دیگر کا خطاب

حیدرآباد ۔ 10 فروری (پریس نوٹ) ڈاکٹر مسعود جعفری کی تصنیف لفظ لفظ تابندہ کی رسم اجرائی کی تقریب دفتر روزنامہ سیاست گولڈن جوبلی ہال میں منعقد ہوئی۔ اس موقع پر مختلف جامعات کے اساتذہ پروفیسر رحمت یوسف زئی، پروفیسر مجید بیدار، پروفیسر میر تراب علی نے کہا کہ مسعود جعفری نے اپنے عصر کی آئینہ داری کی ہے۔ ان کی نگارشات میں شعور و ادراک کی لہریں دکھائی دیتی ہیں۔ ان کی زبان پرکشش اور دلآویز ہوتی ہے۔ ان کے سماجی و ادبی نیز تاریخی مضامین میں علم و آگہی کا دریا رواں دواں رہتا ہے۔ مسعود جعفری کی کتاب دنیائے ادب میں سنگ میل کا درجہ رکھتی ہے۔ حضرت رحمن جامی نے مسعود جعفری کے فکرونظر کی مختلف جہات کا جائزہ لیا اور انہیں ایک بیدار مغز قلمکار سے موسوم کیا۔ پروفیسر ایس اے شکور نے اپنے صدارتی خطاب میں مسعود جعفری کو ان کی کتاب کی اشاعت پر مبارکباد دی اور امید ظاہر کی کہ وہ ہر سال ایک نہیں دو کتابیں منظرعام پر لائیں گے۔ انہوں نے مسعودجعفری کی فکر رسا کو سراہا۔ جناب ریاض علی رضی اور ڈاکٹر بہادر علی مؤظف پرنسپل اسلامیہ ڈگری کالج ورنگل نے مسعودجعفری کی شخصیت اور تخلیقی کائنات پر روشنی ڈالی۔ یہ ادبی جلسہ دانشوروں، شاعروں، ادیبوں اور سماجی شخصیتوں کی موجودگی کا احساس دلا رہا تھا۔ رسم اجراء کی یہ تقریب رات 10 بجے کے قریب اختتام کو پہنچی۔ 9 فروری کی رات افکار عالیہ سے مہک رہی تھی۔ سامعین کی کثیر تعداد سے گولڈن جوبلی ہال بھر گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT