Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / ڈبل بیڈ روم فلیٹس اسکیم ، اسکام میں تبدیل

ڈبل بیڈ روم فلیٹس اسکیم ، اسکام میں تبدیل

اسیکم پر وائیٹ پیپر جاری کرنے حکومت سے مطالبہ ، ایم ششی دھر ریڈی
حیدرآباد ۔ 26 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے سینئیر قائد سابق ریاستی وزیر مسٹر ایم ششی دھر ریڈی نے ڈبل بیڈ روم فلیٹس کی اسکیم ، اسکام میں تبدیل ہوجانے کا الزام عائد کرتے ہوئے اس پر وائیٹ پیپر جاری کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا ۔ آئی ڈی ایچ کالونی میں ایک ہی خاندان کے 14 افراد اور ریٹائرڈ گزیٹیڈ آفیسر کے علاوہ سنٹرل گورنمنٹ کی ملازمت کرنے والے جوڑے کو فلیٹس تقسیم کرنے کا دعویٰ کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر ایم ششی دھر ریڈی نے کہا کہ ٹی آر ایس نے اپنے انتخابی منشور میں ہر غریب افراد کو ڈبل بیڈروم فلیٹ دینے کا وعدہ کیا اور اس کی بڑے پیمانے پر تشہیر کی جس سے متاثر ہو کر عوام نے ٹی آر ایس پر اپنے بھر پور اعتماد کا اظہار کیا تاہم ٹی آر ایس کے دو سالہ دور حکومت میں وعدے کو پورا کرنے کے لیے کوئی عملی اقدامات نہیں کئے گئے ۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات سے قبل عوام کو گمراہ کرنے کے لیے آئی ڈی ایچ کالونی میں 400 فلیٹس تقسیم کئے گئے ۔ اس میں بھی بڑے پیمانے پر بے قاعدگیاں ہوئی ہیں ۔ مقامی رکن اسمبلی ریاستی وزیر مسٹر ٹی سرینواس یادو نے سرکاری مشنری پر دباؤ ڈالتے ہوئے ایک ہی خاندان کے 14 افراد کو فلیٹس منظور کرائے ہیں جب کہ قواعد کے مطابق ایک غیر خاندان کو ایک ہی فلیٹ دیا جانا ہے ۔ جس میں 11 افراد اس اسکیم کے لیے نا اہل ہیں ۔ اس کے علاوہ ایک شوہر اور اس کی شریک حیات کو بھی فلیٹس الاٹ کئے گئے ہیں ۔ ریٹائرڈ گزیٹیڈ آفیسر اور ان کی شریک حیات ایک خاتون وہ ان کے شوہر سنٹرل گورنمنٹ ایمپلائز ہیں کو بھی فلیٹ فراہم کیا گیا ہے ۔ وہ اس کی کلکٹر حیدرآباد کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے شکایت کرچکے ہیں اور اس کی تحقیقات کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے ۔ مسٹر ایم ششی دھر ریڈی نے کہا کہ جی ایچ ایم سی کے انتخابات کے بعد چیف منسٹر نے جی ایچ ایم سی میں ایک لاکھ اور اضلاع میں ایک لاکھ جملہ 2 لاکھ فلیٹس ایک سال میں تعمیر کرنے کا اعلان کیا تھا ۔ جس کے 4 ماہ گذر گئے ہیں مگر ڈبل بیڈ روم فلیٹس کی تعمیرات کا ہنوز آغاز ہی نہیں ہوا ہے ۔ حکومت ڈبل بیڈ روم فلیٹس کے معاملے میں سنجیدہ نہیں ہے اور اسکیم میں کوئی شفافیت ہے ۔ گذشتہ سال دسہرہ کے موقع پر تلنگانہ کے تمام اضلاع و شہری علاقوں میں ڈبل بیڈ روم فلیٹس کے سنگ بنیاد رکھے گئے تھے اور 60 ہزار فلیٹس اندرون 6 ماہ میں تعمیر کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا ۔ ریاستی وزیر کے ٹی آر نے ڈبل بیڈ روم فلیٹس کی تعمیرات کے لیے ٹاٹا ہاوزنگ کی جانب سے دلچسپی دکھانے کا جاریہ سال فروری میں اعلان کیا تھا ۔ اس پر ابھی تک بات آگے نہیں بڑھی ۔ 20 جون 2015 کو حکومت نے جی او ایم ایس نمبر 53 جاری کرتے ہوئے ہیلت اینڈ فیملی ویلفیر ڈپارٹمنٹ کی امیر پیٹ پر واقع 7 ایکڑ قیمتی اراضی پر ڈبل بیڈ روم فلیٹس تعمیر کرنے کا اعلان کیا تھا ۔ لیکن اس اراضی کو پرائیوٹ پیپلز پراپرٹی (PPP) کے تحت اسکام میں تبدیل کرنے کا الزام عائد کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT