Wednesday , November 22 2017
Home / دنیا / ڈونالڈ ٹرمپ ، امریکی سیاسی نظام میں بُری تبدیلی

ڈونالڈ ٹرمپ ، امریکی سیاسی نظام میں بُری تبدیلی

ریپبلکن امیدوار کے منہ پھٹ انداز خطرناک مضمرات کے اندیشے : ہلاری کلنٹن
واشنگٹن ۔ 5 سپٹمبر۔(سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدارتی انتخابات میں ڈیموکریٹک پارٹی امیدوار کی ایک اہم دعویدار ہلاری کلنٹن نے اپنے ایک سرکردہ ریپلکن حریف ڈونالڈ ٹرمپ پر سخت تنقید کرتے ہوئے آج کہا کہ ان ( ٹرمپ ) کی ضرورت سے زیادہ تشہیر اور دولت کے استعمال پر مبنی مہم امریکی سیاسی نظام کیلئے ایک ’’بُری تبدیلی‘‘ ہے ۔ ہلاری کلنٹن بحیثیت وزیر خارجہ اپنی معیاد کے دوران سرکاری کام کیلئے شخصی ای میل کے استعمال کا واقعہ منظرعام پر آجانے کے بعد گرتی ہوئی مقبولیت کو برقرار رکھنے کی جدوجہد میں مصروف ہیں ۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ ریپبلکن پارٹی کے اہم امیدوار دراصل امریکی صدارت کیلئے نااہل ہیں۔ رئیل اسٹیٹ کے سرکردہ بزنس مین ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے ہلاری کلنٹن کی ایک دیرینہ مددگار ہما عابدین پر گزشتہ روز کی گئی تنقید کا جواب دیتے ہوئے انھوں (ہلاری کلنٹن) نے کہاکہ ان ( ٹرمپ ) کی امیدواری دراصل امریکی سیاسی نظام میں ایک ’’بُری تبدیلی‘‘ ہے اور اگر وہ ( ٹرمپ ) صدر بن جائیں تو ان کا منہ پھٹ انداز خطرناک عوامل کا موجب بن سکتا ہے ۔ ہلاری کلنٹن نے کہاکہ ’’عامیانہ انداز گفتگو ، دھمکیاں اور توہین … ان سب کے خطرناک مضمرات ہوسکتے ہیں ۔ ضرورت اس بات کی ہوتی ہے کہ امریکہ کے صدر جو کچھ بھی کہتے ہیں وہ اس پر محتاط انداز میں اظہار خیال کریں‘‘ ۔ انھوں نے مزید کہا کہ ٹرمپ سازشوں اور چالبازی کے ماہر ہیں اور درحقیقت عوام کو بدنام کررہے ہیں۔ ہلاری کلنٹن نے الزام عائد کیا کہ ٹرمپ اور ان کے ساتھ ریپبلکن صدارتی امیدوار ٹڈکروز سفارت کاری پر یقین نہیں رکھتے لیکن امریکی عوام ایک ایسا صدر چاہتے ہیں جو کام کرنے اور سفارتکاری پر یقین رکھتے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT