Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / ڈوکلم تنازعہ کی عنقریب یکسوئی، مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ کا ادعا

ڈوکلم تنازعہ کی عنقریب یکسوئی، مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ کا ادعا

پڑوسیوں سے خوشگوار تعلقات کیلئے ہندوستان کی ہمیشہ جدوجہد، سابق وزیراعظم واجپائی کے قول کا حوالہ

 

نئی دہلی 21 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان اور چین کے درمیان ڈوکلم میں تعطل کی بہت جلد یکسوئی ہوجائے گی۔ مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے آج واضح کردیا کہ ملک اپنی خود مختاری کا تحفظ کرنے کے لئے پوری طرح آراستہ ہے۔ وزیرداخلہ نے چین ۔ ہند سرحد کی نگرانی کرنے والی آئی ٹی بی ٹی کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اُنھیں اُمید ہے کہ چین جلد ہی اِس تنازعہ کی یکسوئی کے لئے کوئی مثبت اقدام کرے گا۔ اُنھوں نے کہاکہ ہندوستان اور چین کے درمیان ڈوکلم میں تعطل برقرار ہے لیکن اُنھیں اِس کی جلد ہی یکسوئی کی توقع ہے۔ اُنھیں اُمید ہے کہ چین کا مثبت اقدام اِس تعطل کا خاتمہ کردے گا۔ مرکزی وزیرداخلہ نے کہاکہ دنیا جانتی ہے کہ ہندوستان نے کبھی کسی بھی ملک پر بُری نظر نہیں ڈالی۔ ہمیشہ ایک قوم کو اپنے توسیعی رویہ کو پروان چڑھانے کی بھی اجازت نہیں دی۔ ہم نے اپنی سرحدات میں توسیع کی کبھی کوشش نہیں کی۔ ہم یہی کہتے آرہے ہیں کہ ہماری فوج اور دفاعی طاقتیں پوری طاقت رکھتی ہیں کہ اپنی سرحدات کی حفاظت کرسکیں۔ ہندوستان اور چین ڈوکلم کے علاقے میں سکم سیکٹر میں ایک دوسرے کے خلاف صف آراء ہیں۔ ہندوستانی فوجیوں نے چینی فوج کو اِس علاقہ میں سڑک کی تعمیر سے روک دینے کے بعد یہ صف آرائی شروع ہوئی تھی۔ چین کا دعویٰ ہے کہ یہ تعمیری کام اُس کی سرزمین پر کیا جارہا ہے اور اُس نے فوری ہندوستانی فوجیوں کے متنازعہ علاقہ ڈوکلم سے تخلیہ کا مطالبہ کیا۔ بھوٹان کا کہنا ہے کہ ڈوکلم اُس کی ملکیت ہے لیکن چین کا دعویٰ ہے کہ یہ اُس کی سرزمین ہے۔ چین ہمیشہ ہندوستان کے خلاف گزشتہ چند ہفتوں سے لفاظی سے کام لیتا رہا ہے اور فوری ہندوستانی فوجیوں کے ڈوکلم سے تخلیہ کا مطالبہ کررہا ہے۔ چین کے سرکاری ذرائع ابلاغ خاص طور پر ڈوکلم میں صف آرائی کے بارے میں ہندوستان کی مذمت کرتے ہوئے مضامین شائع کررہے ہیں۔ اسی سانس میں وزیرداخلہ نے ہند ۔ تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی ٹی) کی دلیری اور جرأت کی ستائش کرتے ہوئے کہاکہ اُن کی مہارت کی وجہ سے سرحد پر کوئی بھی بُری نظر نہیں ڈال سکتا۔ آئی ٹی بی ٹی کو 3488 کیلو میٹر طویل چین ۔ ہند سرحد کی نگرانی کی ذمہ داری دی گئی ہے۔ آئی ٹی بی ٹی مرکزی وزارت داخلہ کی ماتحت ہے۔ مرکزی وزیرداخلہ نے کہاکہ ہندوستان ہمیشہ اپنے پڑوسیوں سے اچھے تعلقات کی برقراری پر یقین رکھتا ہے۔ وزیراعظم مودی نے 2014 ء میں اپنی تقریب حلف برداری کے لئے تمام پڑوسی ممالک کے وزرائے اعظم کو مدعو کیا تھا۔ یہ اقدام صرف مصافحہ یا ہاتھ ملانے کے لئے نہیں تھا بلکہ دلوں کی قربت کے لئے تھا۔ ہندوستان نے اِس دوستی کا کئی مرتبہ اعادہ کیا ہے۔ ہمارے سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کہا کرتے تھے کہ دوست تبدیل کئے جاسکتے ہیں پڑوسی نہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ پڑوسیوں سے خوشگوار تعلقات رکھنے چاہئیں چنانچہ میں اپنے تمام پڑوسیوں کو واضح پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ہم امن کے لئے جدوجہد کرنا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT