ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ کا عہدہ مسلمانوں کو دیا جائے

کانگریس جنرل سکریٹری ضلع محبوب نگر منیر احمد فاروقی کا مطالبہ

کانگریس جنرل سکریٹری ضلع محبوب نگر منیر احمد فاروقی کا مطالبہ

اوٹکور ۔ 6 ۔ مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) جناب محمد منیر احمد فاروقی و تلنگانہ تحریک کے روح رواں و جنرل سکریٹری ضلع کانگریس محبوب نگر نے اپنے ایک صحافتی بیان میں بتایاکہ علحدہ ریاست تلنگانہ کا حصول بڑی جدوجہد سے ممکن ہوا ہے ۔ علحدہ تلنگانہ تحریک پرامن اور جمہوری انداز میں ایک نیک شگون تحریک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صدر کل ہند کانگریس کمیٹی مسز سونیا گاندھی اور نائب صدر مسٹر راہول گاندھی کا تلنگانہ دینے پر شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے کہا کہ 60 سالہ جدوجہد کے بعد علحدہ ریاست تلنگانہ کا قیام عمل میں آرہا ہے ۔ ساڑھے چار کروڑ عوام تلنگانہ ریاست قائم ہونے کیلئے کئی بار تحریکیں چلائی ۔ لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں سیما آندھرا کے چند قائدین کا رویہ بے حد شرمناک تھا ۔ ان ارکان نے پارلیمنٹ کے اندر کچھ ایسا ماحول پیدا کیا جس سے دونوں تلنگانہ اور آندھرا کے عوام کے درمیان تناؤ پیدا ہونے کا اندیشہ ہوگیا تھا ۔ لیکن دونوں علاقوں کے عوام نے صبر و تحمل سے کام کیا اور ریاستوں کے عوام ترقی کرتے ہوئے خوشحالی زندگی گزاریں یہ ہماری خواہش ہے ۔ تلنگانہ کے سارے مسلمان علحدہ تلنگانہ ریاست کے حق میں تھے اور انہوں نے بھی سرگرم رول ادا کیا ہے ۔ تلنگانہ ریاست قائم ہونے یہاں کے مسلمانوں کی ترقی ضرور ہوگی ۔ مسٹر منیر احمد فاروقی نے مرکزی قائدین سے پرزور اپیل کی کہ نئی ریاست تلنگانہ کے ڈپٹی چیف منسٹر کا عہدہ مسلمان کو دیں اور کہا کہ کانگریس پارٹی سے ہی سارے طبقوں اور قوموں کی ہر طرح سے ضرور بھلائی ہوگی ۔ تلنگانہ ریاست میں مسلمانوں کو جو تحفظات دیئے جانے کا وعدہ ہے ۔

اس پر عمل کیا جائے تلنگانہ کے مسلمان علحدہ ریاست میں تعلیم روزگار اور سیاسی میدان میں ترقی کریں گے انہوں نے کہا کہ یہاں کے اوقافی جائیدادوں پر غیرمجاز قبضہ ہوا ہے ہیں مکمل نشاندہی کرواتے ہوئے یہ مسلمانوں کے حوالے کیا جائے ۔ غیرمجاز قبضہ جات کو برخواست کیا جائے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ تلنگانہ ریاست کے قائم ہونے پر اردو زبان کو بھی ترقی حاصل ہو ۔ تلنگانہ کے کئی اضلاع میں اردو بولنے والوں کی تعداد قابل لحاظ ہے یہاں پر اردو زبان کے ساتھ ضرور انصاف کیا جائے ۔ علحدہ تلنگانہ کے حصول میں 4 کروڑ عوام میں 90 لاکھ مسلمانوں کا زبردست رول رہا ہے ۔ انہوں نے مسلمانوں پر زور دیا کہ وہ سب سے پہلے متحدہ طور پر ایک ہوجائیں اور اس کے بعد اپنی زبردست طاقت کا مظاہرہ کریں ۔ آئندہ پارلیمانی و اسمبلی انتخابات میں فرقہ پرست جماعتوں کی سازشوں اور منصوبوں کو ناکام بنایا جائے اور کہا تلنگانہ کرپشن اور تعصب سے پاک ہو اور تمام طبقات کی ترقی کیلئے یکساں مواقع حاصل ہونے چاہیں ۔ اس موقع پر کانگریسی لیڈر محمد بشیر احمد تاڑتپڑی کے علاوہ دیگر کانگریسی قائدین نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT