Friday , December 15 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ڈگری کالج بودھن میں اردو شعبہ کی علحدہ عمارت کی تعمیر کیلئے رقمی منظوری

ڈگری کالج بودھن میں اردو شعبہ کی علحدہ عمارت کی تعمیر کیلئے رقمی منظوری

ریاستی کمشنر کالیجس وانی پرساد کے احکام ‘ حسن سنجری معتمد مولانا آزاد ایجوکیشنل سوسائٹی کا بیان

بودھن ۔ 8ڈسمبر ( ذریعہ میل ) جناب حسن محی الدین سنجری معتمد مولانا آزاد ایجوکیشنل سوسائٹی بودھن کے بموجب ریاست میں اردو داں حضرات اگر اردو کے فروغ کیلئے سنجیدہ کوشش کریں تو نہ صرف دفتری سطح پر اردو کا فروغ ہوسکتا ہے بلکہ تعلیمی اداروں میں اردو کو لازمی قرار دیئے جانے اور لازمی طور پر پڑھانے میں مدد مل سکتی ہے ۔ اردو والوں کی اکثر یہ شکایت ہوتی ہے کہ کئی اردو میڈیم اسکولس کو ایک ہی اسکول میں ضم کیا جارہا ہے اور اردو اسکولوں کی دور دراز علاقوںکو منتقلی عمل میں آرہی ہے اور اردو میڈیم اسکولوں کو بنیادی سہولتوں سے محروم رکھا جارہا ہے ۔ کالجوں میں اردو کلاسیس کو ایک منصوبہ بند انداز میں ختم کیا جارہا ہے ۔ جناب حسن سنجری نے کہا کہ اگر اردو بولنے والے اور اردو کی ہمدردی کا دم بھرنے والے ‘ اردو کے فروغ کے لئے کمربستہ ہوجائیں اور اُس کا جائز مقام حاصل کرنے کیلئے ڈٹ جائیں تو کوئی متعصب عہدیدار ‘ سیاستداں اور حکومت اردو میڈیم مدارس کو برخواست نہیں کرسکتی اور نہ ہی انہیں دور دراز مقامات کو منتقل کرتے ہوئے طلباء و طالبات کو پریشان کرسکتی ہے ۔ کمشنر کالجیسٹ آف تلنگانہ مسٹر وانی پرساد نے بودھن گورنمنٹ ڈگری کالج میں اردو میڈیم سیکشن کیلئے علحدہ عمارت کی تعمیر کیلئے 2 کروڑ 25 لاکھ روپئے جاری کئے جانے کے احکامات جناب حسن محی الدین سنجری معتمد مولانا آزاد ایجوکیشنل سوسائٹی بودھن کے حوالے کیا ۔ واضح ہو کہ اس سلسلہ میں جناب سنجری نے سال 2008ء میں اس وقت کے چیف منسٹر ‘ کمشنرکالجیسٹ اور ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کی توجہ اس جانب مبذول کروائی تھی ۔ اس کے بعد لگاتار وقتاً فوقتاً متعلقہ عہدیداروں سے بارہا نمائندگی کی گئی تھی ۔ واضح ہو کہ جناب حسن سنجری کی مسلسل کوششوں اور کاوشوں کی بدولت مذکورہ کالج میں سال2004 – 05 میں بی اے اردو میڈیم کا قیام 2015-16ء میں بی کام اردو میڈیم کا قیام اور سال 2010ء میں بی اے کی جماعتوں کی درس و تدریس کیلئے چار کنٹراکٹ لکچررس اور ایک مستقبل لکچرر کا تقرر عمل میں لایا گیا ۔ اس کاز کیلئے بودھن کی نامور شخصیتوں جناب حسن محی الدین سنجری ‘ شکیل عامر ‘ رکن اسمبلی بودھن ‘ عابد احمد صوفی ایڈوکیٹ ‘ عبدالوہاب سیفیؔ ‘ قاضی خواجہ محی الدین جمیل صدر قاضی بودھن وغیرہ نے اہم رول ادا کیا ۔ واضح ہو کہ جناب زاہد علی خان صاحب نے مذکورہ ڈگری کالج میں اردو میڈیم بی کام سیکشن کیلئے 30ہزار روپئے کارپس فنڈ کے طور پر پیش کئے تھے  ۔گورنمنٹ ڈگری کالج بودھن کیلئے اردو میڈیم سیکشن کی علحدہ تعمیر کیلئے 2کروڑ 25لاکھ روپئے کی اجرائی پر جناب حسن سنجری نے پرنسپل سکریٹری اعلیٰ تعلیم ‘ کمشنر اعلیٰ تعلیم مسٹر وانی پرساد اور جناب شکیل عامر رکن اسمبلی بودھن ‘ پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج بودھن مسٹر پی وی پرساد ‘ عابد احمد صوفی ایڈوکیٹ صدر ٹی آر ایس بودھن ‘ عبدالوہاب سیفیؔ ‘ سید عبدالحلیم لکچرر کامرس ‘ الطاف الدین پرویز ‘ شیخ فصیح الدین ‘ عبدالقادر ‘ اختر کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے مذکورہ کاز کیلئے اپنا بھرپور تعاون پیش کیا تھا ۔ جناب حسن سنجری نے آئندہ مذکورہ کالج میں بی ایس سی اردو میڈیم کا قیام عمل میں لانے کیلئے جدوجہد کرنے کا تیقن دیا ۔

TOPPOPULARRECENT