Saturday , September 22 2018
Home / ہندوستان / ڈھولا کنواں اجتماعی عصمت ریزی 5 مجرمین کیخلاف جمعہ کو فیصلہ

ڈھولا کنواں اجتماعی عصمت ریزی 5 مجرمین کیخلاف جمعہ کو فیصلہ

نئی دہلی 14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کی عدالت نے جنوبی دہلی کے ڈھولا کنواں علاقہ میں 2010 ء میں پیش آئے اغواء اور اجتماعی عصمت ریزی واقعہ میں تمام 5 ملزمین کو آج مجرم قرار دیا ہے۔ اِنھیں جمعہ کو سزا سنائی جائے گی۔ ایڈیشنل سیشن جج ویریندر بھٹ نے کہاکہ تمام پانچ ملزمین اغواء اور اجتماعی عصمت ریزی کا ارتکاب کرنے والے ہیں اور اِن تمام م

نئی دہلی 14 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کی عدالت نے جنوبی دہلی کے ڈھولا کنواں علاقہ میں 2010 ء میں پیش آئے اغواء اور اجتماعی عصمت ریزی واقعہ میں تمام 5 ملزمین کو آج مجرم قرار دیا ہے۔ اِنھیں جمعہ کو سزا سنائی جائے گی۔ ایڈیشنل سیشن جج ویریندر بھٹ نے کہاکہ تمام پانچ ملزمین اغواء اور اجتماعی عصمت ریزی کا ارتکاب کرنے والے ہیں اور اِن تمام مجرمین کو 17 اکٹوبر کو سزا سنائی جائے گی۔ یہ واقعہ 30 سالہ بی پی او ایکزیکٹیو کے اغواء اور اجتماعی عصمت ریزی سے متعلق ہے۔ عدالت نے عثمان عرف کالے، شمشاد عرف کھٹکن، شاہد عرف چھوٹا بِلّی، اقبال عرف بڑا بِلّی اور قمرالدین عرف موبائیل کو تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت اغواء، اجتماعی عصمت ریزی، مجرمانہ عزائم اور مشترکہ ارادوں کا مجرم قرار دیا۔ عدالت نے تاہم عثمان کو اسلحہ ایکٹ کے تحت بری قرار دیا ہے۔ وہ واحد ملزم ہے جس پر اِس دفعہ کے تحت الزام تھا۔ پولیس کے مطابق تمام مجرمین نے 24 نومبر 2010 ء کو اِس خاتون کا اغواء کرلیا جب وہ اپنے ایک دوست کے ساتھ شفٹ ختم ہونے کے بعد پیدل گھر واپس ہورہی تھی۔ مجرمین اِسے منگول پوری لے گئے جہاں مبینہ طور پر اجتماعی عصمت ریزی کی گئی اور اُسے سڑک پر چھوڑ کر فرار ہوگئے۔ عدالت نے 10 اکٹوبر کو آج فیصلہ سنانے کی تاریخ مقرر کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT