Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / ڈیرا سے لگژری کار ، پرانی کرنسی ، مشکوک ادویات ضبط

ڈیرا سے لگژری کار ، پرانی کرنسی ، مشکوک ادویات ضبط

سچا سودا ہیڈ کوارٹرس میں تلاشی مہم ، بعض کمرے مہربند کردیئے گئے، کمپیوٹر ہارڈ ڈسک بھی برآمد
سرسہ (ہریانہ) 8 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک لگژری کار جس کی رجسٹریشن پلیٹ نمبر اور پرانی کرنسی نوٹس آج یہاں سچا سودا ڈیرہ کے ہیڈکوارٹر سے ضبط کئے گئے، اِس فرقے کا سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ ریپ کا مجرم قرار دیئے جانے کے بعد جیل میں قید ہے۔ ایک عہدیدار نے بتایا کہ سکیورٹی فورسیس اور ضلع حکام نے بڑے پیمانے پر تلاشی مہم چلائی جس کے دوران بعض کمروں کو مہربند کردیا گیا اور ہارڈ ڈسک ڈرائیوز اور مشکوک ادویات بھی برآمد ہوئے ہیں۔ ہریانہ کے ڈپٹی ڈائرکٹر اطلاعات و تعلقات عامہ ستیش مہرا نے میڈیا کو یہ بات بتائی۔ اُنھیں نظم و نسق کی جانب سے اِس ضمن میں مجاز گردانا گیا ہے۔ یہ تلاشی مہم پولیس اور نیم فوجی دستے کی جانب سے سخت سکیورٹی کے درمیان انجام دی گئی جبکہ مختلف حکومتی محکمہ جات کے سینئر عہدیداروں نے نگرانی کی۔ مہرا نے بتایا کہ بعض کمروں کو بند کردیا گیا، کمپیوٹر ہارڈ ڈسک ڈرائیو، غیر رجسٹر شدہ Lexus کار ، ایک او بی ویان اور بند کردی گئی کرنسی میں 7 ہزار روپئے، 12 ہزار روپئے نقدی اور کچھ ادویات جن پر کوئی لیبل نہیں اور نہ ہی برانڈ کا نام ہے، ضبط کردہ اشیاء میں شامل ہیں۔ مہرا کے مطابق فارنسک ٹیمیں کرنال اور سونی پتھ سے سرسہ پہونچیں جبکہ فارنسک ماہرین کو اتراکھنڈ میں رورکی سے بھی طلب کیا گیا۔ اِس تلاشی آپریشن کے دوران پلاسٹک کے سکّے یا ٹوکن برآمد ہونے کی اطلاعات کی توثیق نہیں ہوپائی۔ یہ کارروائی صبح 8 بجے شروع ہوئی جس کی ویڈیو گرافی لی گئی اور ریٹائرڈ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنس جج اے کے ایس پوار نے نگرانی کی جنھیں پنجاب اینڈ ہریانہ ہائی کورٹ نے اِس سلسلہ میں منگل کو کورٹ کمشنر کی حیثیت سے مقرر کیا تھا۔ ڈیرا ہیڈکوارٹرس کی طرف جانے والے راستوں اور اطراف و اکناف کرفیو بدستور لاگو ہے۔ سڑکوں کی ناکہ بندی کردی گئی اور کسی بھی غیر مجاز شخص کو احاطہ ڈیرا کی طرف بڑھنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ تقریباً 800 ایکر پر پھیلے ہوئے ڈیرا کو صاف صفائی اور تلاشی کے مقصد سے 10 زون میں تقسیم کیا گیا ہے اور ہر زون ایک سینئر آفیسر کے کنٹرول میں دیا گیا ہے۔ ضلع سرسہ میں موبائیل انٹرنیٹ سرویس کو 10 ستمبر تک معطل کردیا گیا ہے تاکہ افواہوں کو پھیلنے سے روکا جاسکے۔ جرنلسٹوں کو ہیڈکوارٹرس سے تقریباً 7 کیلو میٹر دوری پر شاہ ستنام سنگھ چوک پر روک دیا گیا۔ یہ چوک شہر کے قلبی علاقے کو ڈیرا سے جدا کرتا ہے اور وہاں بھی بھاری سکیورٹی لگادی گئی ہے۔ چیف منسٹر ہریانہ منوہر لعل کھتر نے قبل ازیں کہا تھا کہ ریاست میں ڈیرا سچا سودا کے اجتماع کے مراکز کی صاف صفائی کے دوران بعض قابل اعتراض اشیاء برآمد ہوئے تھے۔ اُنھوں نے بتایا تھا کہ زائداز 100 مراکز کو چھان مارا جاچکا ہے۔

TOPPOPULARRECENT