Saturday , July 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ڈینگی کا اب 24 گھنٹوں میں پتہ لگانا ممکن

ڈینگی کا اب 24 گھنٹوں میں پتہ لگانا ممکن

حیدرآباد ۔ 14 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : مچھروں کی کثرت اور ان سے ہونے والی بیماریوں کے مسائل سے سب ہی واقف ہیں جب کہ مچھروں کی وجہ سے سب سے زیادہ تکلیف اور پریشان کرنے والا مرض ڈینگی ہے جس سے تیز بخار ، پیٹ کے امراض ، عمل تنفس کے مسائل اور جسمانی چند اعضاء کا ناکارہ ہونا بھی اس میں شامل ہے جب کہ ڈینگی کا فوری علم ہوجانے سے علاج میں آسانی ہوتی ہے ۔ ڈینگی کا پتہ چلانے کے لیے جو ٹسٹ اب تک روایتی انداز میں کیا جاتا ہے اس کی رپورٹ 3 تا 4 دنوں میں موصول ہوتی ہے اور ان چند دنوں میں مریض کو کافی کچھ برداشت کرنا پڑتا ہے لیکن اب آئی جینئک لیب میں عصری سہولیات سے استفادہ کرتے ہوئے ڈینگی کی رپورٹ 24 گھنٹوں میں حاصل کی جارہی ہے جو کہ ڈینگی کے مریضوں اور اس مرض کا علاج کرنے والے ڈاکٹروں کے لیے راحت کی بات ہے ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی اہمیت کا حامل ہے کہ حالیہ برسوں میں ڈینگی کے امراض کے معاملوں میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے جیسا کہ نیشنل وکٹر ڈیسیز کنٹرول پروگرام ڈی جی ایچ ایس کے بموجب 2010 تا 2017 کے دوران ڈینگی کے معاملے 157220 درج ہوئے ہیں جو کہ 55 گنا اضافہ ہے ۔ علاوہ ازیں دارالحکومت دہلی کے علاوہ اہم شہروں جن میں حیدرآباد بھی شامل ہے ڈینگی کی وباء سے متاثر ہونے والے ہیں اور آئے دن ان شہروں میں ڈینگی سے عوام پریشان اور دواخانے بھرے ہوئے ہوتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT