Saturday , December 15 2018

ڈیٹا افشاء سے 5.62 لاکھ ہندوستانی متاثر

برطانوی فرم نے ڈیٹا کو ہماری مرضی کے بغیر استعمال کیا : فیس بک
نئی دہلی 5 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکی سوشل میڈیا ادارہ فیس بُک نے آج یہ اعتراف کرلیا ہے کہ ہندوستان میں 5.62 لاکھ افراد اِس کے عالمی ڈیٹا افشاء کی وجہ سے شدید متاثر ہوں گے۔ کیمبرج انالیٹکا نے اِس ڈیٹا کا افشاء کیا ہے۔ فیس بُک نے زور دے کر کہاکہ برطانوی فرم نے اِس طرح کے ڈیٹا کو اِس کی مرضی کے بغیر استعمال کیا ہے۔ ڈیٹا افشاء اسکینڈل پر حکومت ہند کے سوال کا جواب دیتے ہوئے فیس بُک نے اطلاع دی ہے کہ ہندوستان میں صرف 335 افراد ایک ایپ کی تنصیب کے ذریعہ راست متاثر ہوں گے ماباقی 562120 افراد بُری طرح متاثر ہوں گے۔ اِسی طرح فیس بُک استعمال کرنے والوں کے فرینڈس بھی ہندوستان میں تقریباً 20 کروڑ ہیں۔ کیمبرج انالیٹکا نے فیس بُک ڈیٹا کو حاصل کیا ہے۔ یہ ڈیٹا ڈاکٹر الکیشندر کوگن اور ان کی کمپنی گلوبل سائنس ریسرچ لمیٹیڈ کی جانب سے تیار کردہ ایپ کے ذریعہ حاصل کیا گیا ہے۔ فیس بُک کے ترجمان نے ایک بیان میں کہاکہ ڈیٹا حاصل کرنے سے قبل ہمارے حکام سے کوئی اجازت نہیں لی گئی۔ یہ حرکت ہماری پلیٹ فارم پالیسیوں کے یکسر مغائر ہے۔ کیمبرج انالیٹکا سے فیس بُک نے کوئی اتفاق رائے نہیں کیا ہے۔ اِس ایپ کے ذریعہ فیس بُک استعمال کرنے والا اِس ڈیٹا کو اکٹھا کرسکتا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT