Tuesday , December 11 2018

ڈی ایس سی 1998 اہل امیدواروں کے تقرر کی راہ ہموار

چیف منسٹر کے سی آر نے انصاف کی یقین دہانی کرائی

چیف منسٹر کے سی آر نے انصاف کی یقین دہانی کرائی
حیدرآباد 13 جنوری (سیاست نیوز) چیف منسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے سابق سیما آندھرا حکمرانوں کے 16 سال سے زیادتی اور ناانصافی کا شکار ڈی ایس سی 1998 ء کے اہل امیدواروں کے تقرر سے اُصولی طور پر اتفاق کرلیا ہے۔ توقع ہے کہ اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں پر اِن امیدواروں کی تقرری کے احکامات جلد جاری کردیئے جائیں گے۔ اُس وقت کی تلگودیشم حکومت نے ڈی ایس سی 1998 ء کا انعقاد عمل میں لایا اور نتیجہ جاری کردیا گیا تھا۔ اس کے باوجود 16 سال سے احکام تقرری جاری نہیں کئے گئے۔ چیف منسٹر نے اہل امیدواروں کے ساتھ انصاف کے معاملہ میں تاخیر پر ناراضگی ظاہر کی اور محکمہ تعلیم کے ڈائرکٹر کو ضروری ہدایات دیں۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ سابقہ حکومتوں کی ناانصافی کے خلاف ڈی ایس سی 1998 ء اہل امیدوار اڈمنسٹریٹیو ٹریبونل اور ہائیکورٹ سے رجوع ہوئے تھے۔ عدالتوں نے اِن امیدواروں کے حق میں فیصلہ سنایا۔ اِس کے باوجود اُن کے ساتھ انصاف نہیں کیا گیا۔ آخرکار اہل امیدوار سپریم کورٹ سے رجوع ہوئے اور اُس نے گزشتہ ماہ حکومت تلنگانہ کو یہ مسئلہ جلد از جلد حل کرنے کا حکم دیا۔ عدالت نے 2 فروری تک اِس معاملہ میں عمل آوری رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت بھی دی۔ حکومت کے اِس اقدام سے تلنگانہ کے 10 اضلاع میں تقریباً 1200 ڈی ایس سی 1998 امیدواروں کو فائدہ ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT