Monday , December 18 2017
Home / دنیا / کابل سفارتی علاقہ میں طالبان حملہ ‘ بشمول دو اسپینی 7 ہلاک

کابل سفارتی علاقہ میں طالبان حملہ ‘ بشمول دو اسپینی 7 ہلاک

KABUL, DEC 12- Afghan security personnel take pictures of the dead body of attacker outside the guest house attached to the Spanish embassy in Kabul, Afghanistan December 12, 2015. Afghan security forces suppressed a suicide attack on a guest house attached to the Spanish embassy in Kabul, killing three Taliban fighters after hours of intermittent gunfire and explosions that lasted into the early hours of Saturday. REUTERS/UNI PHOTO-12R

رات بھر دھماکوں اور فائرنگ کے تبادلہ کے بعد تمام حملہ آوروں کو بھی مار گرایا گیا

کابل، 12 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) کابل کے سفارتی حلقہ میں اسپینی سفارتخانہ کے قریب طالبان کے حملے میں کم از کم چار افغان پولیس اہلکار اور دو اسپینی باشندوں کے بشمول سات افراد ہلاک ہوگئے ہیں، حکومت نے یہ بات کہی۔ یہ لڑائی ایک گھنٹے تک جاری رہی تھی۔ تخریب کاروں کا یہ حملہ آج ختم ہوا ۔ انتہائی سکیوریٹی والے زون میں کئی دھماکے ہوئے اور فائرنگ کا تبادلہ بھی عمل میں آیا تھا۔ افغان وزارت داخلہ کے ترجمان صدیق صدیقی نے ہفتہ کو کہا کہ اس حملے میں چار افغان پولیس عہدیدار اور دو دیگر بشمول ایک بیرونی شہری کی ہلاکت ہوئی۔ اسپینی وزارت داخلہ نے بعد میں اعلان کیا کہ ایک اسپینی پولیس ملازم ہلاک ہوا اور ایک دیگر اسپینی آفیسر اس لڑائی میں زخموں سے جانبر نہ ہوسکا، جس کے ساتھ مہلوکین کی تعداد سات ہوگئی ہے۔ اس حملہ کا کل آغاز ہوا تھا ۔

حملے سے چند گھنٹے قبل ہی افغان صدر اشرف غنی نے اس امید کا اظہار کیا تھا کہ طالبان کے ساتھ بات چیت کا عمل چند ہفتوں میں شروع ہوگا ۔ کابل کے فوجداری تحقیقات محکمہ کے سربراہ فریدون عبیدی نے کہا کہ اس حملہ میں چار افغان پولیس اہلکار اور دو بیرونی شہری ہلاک ہوئے ہیں۔ اس کے علاوہ چار حملہ آوروں کو بھی ہلاک کردیا گیا ہے ۔ اس دوران میڈرڈ (اسپین) میں حکومت نے توثیق کی کہ دو بیرونی باشندے اسپینی پولیس اہلکار تھے جو اس حملہ میں ہلاک ہوگئے ۔ کہا گیا ہے کہ کل شام مصروف اوقات میں ایک کار دھماکہ کے بعد اس حملہ کا آغاز ہوا تھا ۔ اس دھماکہ کے بعد آسمان میں کثیف دھواں پھیل گیا تھا ۔ اس کے بعد مزید دھماکے ہوئے اور فائرنگ کا تبادلہ بھی رات بھر جاری رہا ۔ وقفہ وقفہ سے دھماکہ کی آوازیں بھی سنائی دے رہی تھیں۔ زخمیوںکو منتقل کرنے کے دوران بھی وہاں متعین سکیوریٹی اہلکاروں کو فائرنگ کی زد میں آنے سے بچنے کی کوشش کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے ۔ ان زخمیوں کو قریب میں منتظر ایمبولنس سے دواخانہ منتقل کیا گیا ۔ افغان عہدیداروں نے کہا کہ حملہ آوروں میں آخری چار دہشت گردوں کو آج صبح کی اولین ساعتوں میں ہلاک

TOPPOPULARRECENT