Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / کابینہ میں توسیع کے بعد قائدین کی ناراضگی نا مناسب

کابینہ میں توسیع کے بعد قائدین کی ناراضگی نا مناسب

وشاکھا پٹنم کو نالج سٹی و سیاحتی مرکز میں تبدیل کرنے کا عزم ۔چندرا بابو نائیڈو کا بیان
حیدرآباد 8 اپریل ( سیاست نیوز ) چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ وشاکھا پٹنم جیسا خوبصورت شہر ملک بھر میں کہیں نہیں ہے جس کے پیش نظر حکومت وشاکھا پٹنم کو ایک نالج اور سیاحتی مرکز کے طور پر ترقی دینے کے اقدامات کرے گی ۔ وشاکھا پٹنم میں بڑے پیمانے پر تعلیمی اداروں ، سوپر اسپیشالیٹی ہاسپٹلس ، انفارمیشن ٹکنالوجی اداروں کا قیام عمل میں لانے کثیر تعداد میں ممتاز شخصیتیں پہل کررہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش کو تعلیمی ، سیاحت ، طبی انفارمیشن ٹکنالوجی ، انڈسٹریز ، و دیگر شعبوں میں سرفہرست بنانے اقدامات کیے جارہے ہیں ۔ اس کے علاوہ ریاست کی مجموعی ترقی کو اہم مقصد تصور کرتے ہوئے حکومت مرحلہ وار اساس پر اقدامات کرتے ہوئے آگے بڑھ رہی ہے ۔ چندرا بابو نائیڈو نے آج وشاکھا پٹنم کے مختلف مقامات کا دورہ کیا ۔ سمہا چلم کے مقام پر سولار انرجی سنٹر کا افتتاح کیا ۔ اس کے علاوہ کلیان منڈپم ، ڈارمیٹری کی تعمیر کیلئے سنگ بنیاد رکھنے کی رسم انجام دیں ۔ چیف منسٹر نے اپنے دورہ وشاکھا پٹنم کے موقعہ پر بحریہ کے چیف آفیسر سے ملاقات کر کے آل این ایس کا مشاہدہ کیا ۔ بعد ازاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ گذشتہ دنوں ریاستی کابینہ میں توسیع اور رد و بدل کی وجہ سے پارٹی کے کسی قائد میں ناراضگی نہیں ہے ۔ تاہم اگر کوئی ناراض ہوں تو وہ مناسب نہیں ہے کیونکہ ہر زاویہ سے غور و خوض کرکے تمام طبقات کو مناسب نمائندگی دینی ہوتی ہے ۔ لہذا ہر کسی کو حالات کو سمجھنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے یاد دلایا کہ کتنی مشکل دہ صورتحال میں امراوتی کا رخ کرنا پڑا ۔ اور اس نئی ریاست میں مستحکم موقف اختیار کرنے کا کوئی بھروسہ یا اطمینان ہرگز نہیں تھا ۔ کیوں کہ انتہائی تشویشناک صورتحال میں امراوتی کو آنے پر مجبور ہونا پڑا ۔ اور ایسے حالات کے دوران کوئی کسی بھی مسئلہ پر سیاست کرناٹھیک نہیں ہوگا ۔چیف منسٹر نے کہا کہ ریاست میں عوامی ترقی وغیرہ کیلئے بلا تخصیص جماعتی وابستگی محنت کی ضرورت ہے ۔ مسٹر نائیڈو نے کہا کہ آئندہ دس سال تک سب مل کر ریاست کی ترقی کیلئے متحدہ جدوجہد کرنے پر اولین ترجیح دی جانی چاہئے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT