Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / کابینہ میں توسیع کے فیصلے سے چیف منسٹر کو مشکلات

کابینہ میں توسیع کے فیصلے سے چیف منسٹر کو مشکلات

وزارت کیلئے کے سی آر کے قریبی ساتھی ایشور کے حامیوں کا احتجاج

وزارت کیلئے کے سی آر کے قریبی ساتھی ایشور کے حامیوں کا احتجاج
حیدرآباد 14 ڈسمبر ( این ایس ایس ) چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کیلئے ایسا لگتا ہے کہ کابینہ میں توسیع کا فیصلہ درد سر بنتا جارہا ہے ۔ ان کے قریبی ساتھی اور مالا برادری کے لیڈر کپولہ ایشور نے کابینہ میں عدم شمولیت پر ناراضگی کا اظہار کیا ہے ۔ صورتحال مزید بے قابو ہوتی نظر آ رہی ہے کیونکہ ایشور کے حامیوں نے کریمنگر میں احتجاج کیا اور راستہ روکو منظم کیا ۔ چیف منسٹر نے مسٹر ایشور سے رابطہ کرتے ہوئے انہیں مطمئن کرنے کی کوشش کی ۔ چیف منسٹر کے فون کے بعد ایشور جلدی میں کریمنگر سے حیدرآباد کیلئے روانہ ہوگئے ۔ جب ٹی آر ایس نے حکومت قائم کی اس وقت انہیں کابینہ میں شامل نہیں کیا گیا تھا اور منگل کو ہونے والی مجوزہ توسیع میں بھی انہیں وزارت ملنے کا امکان نہیں ہے ۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ناراضگی کی یہ صورتحال ٹی آر ایس کیلئے مسئلہ بن رہی ہے کیونکہ ایم پی ٹی سی وینکنا نے کریمنگر ضلع میں ویلگاتورو کے مقام پر خود سوزی کی کوشش کی ۔ وہ ایشور کو وزارت کا مطالبہ کر رہے تھے ۔ مٹسر ایشور کو چندر شیکھر راؤ کا قریبی ساتھی سمجھا جاتا ہے اور وہ سلجھے مزاج کے حامل غیر نزاعی شخصیت سمجھے جاتے ہیں۔ ایشور کریمنگر ضلع میں میدارم سے 2004 میں رکن اسمبلی منتخب ہوئے تھے ۔ وہ اب دھرمپوری حلقہ کی اسمبلی میں نمائندگی کرتے ہیں۔ واضح رہے کہ کریمنگر میں کے ٹی آر کئی مرتبہ کہہ چکے ہیں کہ ایشور وزیر بنیں گے ۔ سمجھا جارہا ہے کہ خود چندر شیکھر راؤ نے بھی انہیں وزیر بنانے کا وعدہ کیا تھا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT