Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / کاربائیڈ سے پھل پکانے پر سخت سزا اور جرمانہ

کاربائیڈ سے پھل پکانے پر سخت سزا اور جرمانہ

حیدرآباد ۔ 17 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت تلنگانہ نے انسانی صحت کے لیے مضر زہریلے کیمیکل ’کاربائیڈ ‘ کے ذریعہ پھلوں کو پکانے کے مرتکب افراد کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے فوڈ سیفٹی اور اسٹانڈرڈ ایکٹ 2006 کے تحت مقدمات درج کر کے 6 ماہ جیل کی سزاء کے علاوہ ایک لاکھ روپئے جرمانہ عائد کرنے سے متعلق قانون کو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ذرائع کے بموجب اس سلسلہ میں حکومت تلنگانہ مذکورہ قانون پر عمل آوری اور عوام میں شعور بیدار سے متعلق ہائی کورٹ میں ایک اپیل دائر کی ہے ۔ حکومت نے کاربائیڈ پر پابندی عائد کرنے ، کاربائیڈ کے ذریعہ پکائے گئے پھلوں اور میوؤں کی مارکٹ میں فروخت پر امتناع عائد کرنے ، کاربائیڈ سے پکائے جانے والے پھلوں کے استعمال سے ہونے والے نقصانات ، کھانے پینے کی اشیاء میں کاربائیڈ کا استعمال جرم ہونے سے متعلق حکومت کی جانب سے اعلامیہ کی اجرائی کے منصوبہ سے متعلق ہائی کورٹ کو مطلع کیا ہے ۔ جب کہ حکومت تلنگانہ نے فروٹ مارکٹوں ، کارپوریٹ ، آوٹ لیٹس ، مالس میں سائن بورڈس آویزاں کرنے ، ریاست کے ہر ضلع سے فروٹس کے نمونے حاصل کر کے لیبارٹیریز کو روانہ کرنے ، جرم کے مرتکب تجارت پیشہ افراد کے خلاف FSSA قانون کے تحت مقدمات درج کرنے ، کیمیکل سے پکائے گئے پھلوں اور فروٹس فروخت کرنے والوں کو 6 ماہ جیل کی سزا اور ایک لاکھ روپئے جرمانہ عائد کرنے سے متعلق قانون کی تفصیلات کے تعلق سے فروٹ مارکٹوں میں پوسٹر چسپاں کرنے ، کاربائیڈ سے پکائے گئے فروٹس اور پھلوں کی فروخت پر پابندی عائد کرنے کے لیے ضلعی سطحوں پر کمیٹیوں کی تشکیل اور کمیٹی کی نگرانی میں ہر ماہ خصوصی جائزہ اجلاس کے علاوہ اہم اور چلر فروشوں کو نوٹس کی اجرائی ، قانون کی خلاف ورزی کے مرتکب افراد اور چلر فروشوں کے خلاف کارروائی کرنے ، دوکانوں کو مہر بند کرنے کے ساتھ ساتھ ٹریڈ لائسنس کو منسوخ کردئیے جانے کے مقامی اداروں کو احکامات کے تعلق سے حکومت کے منصوبے سے متعلق ہائی کورٹ کو واقف کروایا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT