Sunday , November 19 2017
Home / ہندوستان / کارتی کیخلاف سی بی آئی اپیل پر سپریم کورٹ کا 18 ستمبر کو فیصلہ

کارتی کیخلاف سی بی آئی اپیل پر سپریم کورٹ کا 18 ستمبر کو فیصلہ

نئی دہلی 11 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم کے فرزند کارتی چدمبرم کے خلاف رشوت کے ایک کیس میں حکومت کے لُک آؤٹ سرکلر پر مدراس ہائیکورٹ کی جانب سے حکم التواء جاری کئے جانے کے جواز کو چیلنج کرتے ہوئے داخل کردہ سی بی آئی کی اپیل پر اپنا فیصلہ 18 ستمبر پر ڈال دیا ہے۔ سی بی آئی کی جانب سے 15 مئی کو درج ایف آئی آر میں الزام عائد کیا گیا کہ 2007 ء میں جب کارتی کے والد وزیر فینانس تھے، 305 کروڑ روپئے کے بیرون ملک سے فنڈس حاصل کرنے کے لئے آئی این ایکس میڈیا کو فارن انوسٹمنٹ پروموشن بورڈ کی منظوری فراہم کرنے میں بے قاعدگیاں کی گئیں۔ چیف جسٹس دیپک مشرا اور جسٹس اے ایم کھانویلکر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ نے آج کہاکہ مدراس ہائیکورٹ کے حکمنامے کے بارے میں اِس کی ہدایت قطعی فیصلے تک برقرار رہے گی اور اس کے نتیجہ میں کارتی ہندوستان چھوڑنے سے قاصر رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT