Wednesday , November 14 2018
Home / شہر کی خبریں / کارپوریشن کی اسکیمات پر موثر عمل آوری اولین ترجیح

کارپوریشن کی اسکیمات پر موثر عمل آوری اولین ترجیح

مالیاتی اسکام کے 58 کروڑ کی بازیابی، ایم اے وحید نے اقلیتی فینانس کارپوریشن کی ذمہ داری سنبھال لی
حیدرآباد۔ 13 اپریل (سیاست نیوز) ریٹائرڈ آئی ایس ایف عہدیدار ایم اے وحید نے آج نائب صدر نشین و منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن کے عہدے کا جائزہ حاصل کرلیا۔ اس موقع پر صدرنشین کارپوریشن سید اکبر حسین اور کارپوریشن کے عہدیدار موجود تھے۔ بی شفیع اللہ آئی ایف ایس سے ایم اے وحید نے یہ ذمہ داری حاصل کی ہے جو اقامتی اسکول سوسائٹی کے سکریٹری کی حیثیت سے برقرار ہیں۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ایم اے وحید نے کہا کہ حکومت کی اسکیمات پر موثر عمل آوری ان کی اولین ترجیح ہوگی۔ فینانس کارپوریشن میں 58 کروڑ کا جو اسکام ہوا تھا وہ رقم وجئے بینک سے حاصل کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد رقم کی بازیابی کے لیے ماہرین قانون سے مشاورت کی جائے گی۔ ایم اے وحید کو سابق میں اس وقت منیجنگ ڈائرکٹر کی ذمہ داری دی گئی تھی جب کارپوریشن میں مالیاتی اسکام منظر عام پر آیا تھا۔ اس وقت کے منیجنگ ڈائرکٹر الیاس رضوی کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ایم اے وحید کو ذمہ داری دی گئی جنہوں نے اسکام کی تحقیقات اور رقم کی بازیابی میں اہم رول ادا کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ قانونی ماہرین سے مشاورت کے بعد بینک سے رقم حاصل کرنے کی کوشش کریں گے۔ ایم اے وحید نے کہا کہ حکومت کے مشیر برائے اقلیتی امور، سکریٹری اقلیتی بہبود اور ڈائرکٹر اقلیتی بہبود کے تعاون سے وہ اسکیمات پر عمل آوری کو یقینی بنائیں گے۔ حکومت کی جانب سے جو بھی بجٹ جاری کیا جائے گا اس کا موثر استعمال اولین ترجیح ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ بینکوں سے مربوط سبسیڈی اسکیم، ٹریننگ ایمپلائمنٹ اور کمپیوٹر سنٹرس اہم اسکیمات ہیں۔ گزشتہ دو برسوں میں زیر التوا درخواستوں کی یکسوئی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت بجٹ جاری کرے تو تمام مستحقین کو سبسیڈی جاری کی جائے گی۔ ایم اے وحید نے عہدیداروں کے ساتھ سبسیڈی اسکیم کی پیشرفت کا جائزہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ کمپیوٹر سنٹرس کو عصری بنایا جائے گا اور فیلکٹیس کو ٹریننگ دی جائے گی۔ ٹریننگ ایمپلائمنٹ اسکیم کے سلسلہ میں ٹریننگ پارٹنرس کے ساتھ اجلاس منعقد کرتے ہوئے نئے کورسس کا انتخاب کیا جائے گا۔ ایم اے وحید نے کہا کہ وہ بحیثیت منیجنگ ڈائرکٹر کارپوریشن کی کارکردگی کو نہ صرف شفاف بنائیں گے بلکہ عہدیداروں اور ملازمین میں ڈسپلین، ورک کلچر اور جواب دہی کا احساس پیدا کیا جائے گا۔ کسی بھی اسکیم کی بے قاعدگی کی گنجائش نہیں رہے گی اور کوئی بھی کام رولس کے مطابق ہوگا۔ جنرل منیجر ایم اے باری اور اسسٹنٹ جنرل منیجر ایم اے باسط اور دیگر عہدیداروں نے نئے منیجنگ ڈائرکٹر کا استقبال کیا۔

TOPPOPULARRECENT