Thursday , February 22 2018
Home / شہر کی خبریں / کاس گنج فساد منظم سازش کا حصہ

کاس گنج فساد منظم سازش کا حصہ

چیف منسٹر یو پی آدتیہ ناتھ کا علامتی پتلہ نذر آتش ، تنظیم انصاف کا احتجاج
حیدرآباد۔8فبروری( سیاست نیوز) اترپردیش کے کاس گنج میں26جنوری کو پیش آئے فرقہ وارانہ فسادات اور اس کے بعد پولیس کی یکطرفہ کاروائی کے خلاف تنظیم انصاف کے زیر اہتما م حمایت نگر وائی سرکل پر احتجاجی مظاہرہ پیش کیاگیا اور چیف منسٹر اترپردیش یوگی آدتیہ ناتھ کا علامتی پتلہ بھی نذر آتش کیاگیا۔ سابق رکن پارلیمنٹ راجیہ سبھا وقومی صدر تنظیم انصاف سید عزیز پاشاہ کی قیادت میںمنعقدہ اس احتجاجی پروگرام میںانصاف کے ریاستی جنرل سکریٹری منیر پٹیل کے علاوہ اے آئی وائی ایف کے شہری جنرل سکریٹری ندیم احمد اورانصاف کے سینکڑوں کارکنوں نے شرکت کی۔ سید عزیزپاشاہ نے کہاکہ ملک کے غدار مسلمانوں سے حب الوطنی کے سرٹیفیکٹ کی ضرورت نہیں ۔ بھگوا تنظیم کے کارکنوںنے ’مسلمانوں کو دو آستان ‘ پاکستان یاقبرستان ‘ کے نعرے لگاتے ہوئے مشتعل کیا۔ نہ صرف مسلمانوں کے ساتھ مارپیٹ کی بلکہ مسلمانوں کی دوکانیں او رعبادت گاہیںبھی جلائیں ۔ اس جھڑپ میںایک نوجوان چندن گپتا کا قتل ہوگیا اور الزام مسلمانوں کے سر تھوپا گیا۔ انہو ںنے کہاکہ پچھلے دس دنوں سے مسلمانوں کے ساتھ جانوروں جیسا سلوک کیاجارہا ہے ۔ یوگی آدتیہ ناتھ انتظامیہ فساد سے متاثرہ مسلمانوں کو قصور وارٹھراتے ہوئے مسلمان کی گرفتاریاں عمل میںلا رہی ہیں۔جناب سیدعزیز پاشاہ نے کہاکہ حالانکہ چندن گپتا کا قاتل کون ہے اس کی اب تک کوئی وضاحت نہیں ہوئی مگر بے دریغ مسلمانوں کی گرفتاریاں عمل میںلائی جارہی ہیں۔جناب سیدعزیز پاشاہ نے کہاکہ اترپردیش میںقانون نام کی کوئی چیز باقی نہیںہے فساد پر سیول سوسائٹی کی ایک تحقیقی رپورٹ بھی منظر عام پر آگئی ہے‘جس میںصاف طور سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ فساد ایک منظم سازش کا حصہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT