Monday , January 22 2018
Home / ہندوستان / کالا دھن تنازعہ سپریم کورٹ میں مزید ناموں کا انکشاف

کالا دھن تنازعہ سپریم کورٹ میں مزید ناموں کا انکشاف

نئی دہلی ۔27 اکٹوبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام) مرکزی حکومت نے آج سپریم کورٹ میں مزید 8 ناموں کا انکشاف کیا جن میں ڈابر انڈیا پروموٹرس کے پردیپ برمن ، ارب پتی تاجر راجکوٹ کے پنکج چمن لال لودھیا اور گوا کی کان کنی کمپنی کے پانچ ڈائرکٹرس شامل ہیں۔ حکومت نے سیاسی پارٹیوں کی اُس پر تنقید کے بعد کے وہ چُن چُن کر ناموں کا افشاء کررہی ہے ، سپریم کورٹ میں حلف نامہ داخل کرتے ہوئے مزید ناموں کا انکشاف کیا ۔ برمن کا نام فرانسیسی عہدیداروں سے اور لودھیا اور دیگر کے نام دیگر ممالک سے وصول ہوئے ہیں۔ ٹمبلو پرائیویٹ لمیٹیڈ کانکنی کمپنی اور اس کے ڈائرکٹرس کے نام بھی فہرست میں شامل ہیںلیکن یہ واضح نہیں ہوسکا کہ کمپنی کا بینک اکاؤنٹ ہے یا اس کے ڈائرکٹرس کے نام پر اکاؤنٹ کھولا گیا ہے ۔ انکشاف کے کچھ ہی دیر بعد برمن خاندان نے کہاکہ اُن کا اکاؤنٹ تمام قانونی ضروریات کی تکمیل کرتا ہے ۔حکومت نے 16 صفحات پر مشتمل حلف نامہ داخل کرتے ہوئے کہا کہ اُسے مزید ناموں کے انکشاف میں کوئی مشکل نہیں ہے لیکن جب تک اُن کے خاطی ہونے کا ثبوت نہ حاصل ہوجائے حکومت ناموں کا انکشاف کرنا نہیں چاہتی۔ دیگر ممالک کے ساتھ ٹیکس کے معاہدہ ہیں اور قانونی کارروائی کی تکمیل کے بعد ہی تمام ناموں کا انکشاف کیا جاسکتا ہے ۔آج کے اضافی حلف نامہ میں حکومت نے صرف اُن ناموں کا انکشاف کیا ہے جن کے بیرون ملک بینک کھاتے ہونے اور ہندوستان میں اُن کی ٹیکس چوری کے ثبوت حاصل ہوچکے ہیں ۔ حکومت نے کہاکہ دیگر افراد کے خلاف ثبوت حاصل ہوجانے اور اُن کے خلاف قانونی کارروائی کے آغاز کے بعد ہی اُن کے ناموں کا انکشاف کیا جاسکتا ہے ۔ رادھا ٹمبلو نے کہاکہ وہ پہلے حکومت کے داخل کردہ حلف نامہ کا مطالعہ کریں گی اور اس کے بعد ہی رائے ظاہر کریں گی ۔

TOPPOPULARRECENT