Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / کالا دھن ختم کرنے ایک ہزار اور پانچ سو روپئے کے نوٹ منسوخ کیے جائیں

کالا دھن ختم کرنے ایک ہزار اور پانچ سو روپئے کے نوٹ منسوخ کیے جائیں

وزیراعظم کو چندرا بابو نائیڈو کا مکتوب ، الکٹرانک ادائیگی سسٹم کو فروغ دینے پر زور
وجئے واڑہ ۔ 13 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز) : چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے وزیراعظم نریندر مودی کو موسومہ مکتوب میں ان پر زور دیا ہے کہ ملک میں کالا دھن کا خاتمہ کرنے کے لیے ایک ہزار روپئے اور پانچ سو روپئے کے کرنسی نوٹوں کا چلن منسوخ کریں ۔ انہوں نے وزیراعظم سے یہ خواہش بھی کی کہ سویزرلینڈ کے بنکس پر دباؤ تیز کیا جائے کہ ان افراد کے ناموں کا انکشاف کیا جائے جن کا کالا دھن بنکس میں جمع ہے ۔ چندرا بابو نائیڈو نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کالا دھن متوازی معیشت بن چکا ہے اور اس کی وجہ سے سیاسی سرگرمیوں کے بشمول تمام شعبہ جات آلودہ ہوچکے ہیں ۔ سیاستداں انتخابات میں بڑھتے ہوئے اخراجات اور سیاسی مخالفین کے بڑھے چڑھے اخراجات سے خوفزدہ ہیں ۔ اس کے نتیجہ میں کسی بھی طریقہ سے رقم حاصل کرنے کی ناروا دوڑ شروع ہوچکی ہے ۔ اس کے پیش نظر ضروری ہے کہ ملک میں بے رقم لین دین کا عمل شروع کیا جائے جب تک ہر لین دین بنکس کی معرفت نہیں ہوگا ۔ کالا دھن کا پتہ چلانا اور اس کا خاتمہ کرنا ممکن نہیں ہے ۔ چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ بے رقم لین دین کرنے کے لیے ٹکنالوجی سے استفادہ کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی معاملت کرنے کے لیے ایک اسمارٹ فون کافی ہے ۔ چاہے یہ شاپنگ ہو ٹرایولنگ ہو ادائیگی ہو حتی کہ بیرون ملک خرچ ہی کیوں نہ ہو ایک اسمارٹ فون اس کام کے لیے کافی ہے ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ کالا دھن کا خاتمہ کرنے اور شفاف معیشت کے لیے الکٹرانک ادائیگی کا کلچر لانے کی ضرورت ہے ۔ چندرا بابو نائیڈو نے کالا دھن کے رضاکارانہ انکشاف سے متعلق مرکز کی حالیہ اسکیم کا خیر مقدم کیا اور ملک میں کرپشن سے پاک کارکرد نظم و نسق فراہم کرنے کی وزیراعظم نریندر مودی کی کوششوں کو خراج تحسین پیش کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کو چاہئے کہ وہ کالا دھن باہر لانے کے لیے سویس بنک اور دنیا پر اپنا دباؤ ڈالے اگر ایسے اقدامات نہیں کئے گئے تو کالا دھن ملک میں بیرونی ادارہ جاتی سرمایہ کاری کی حیثیت سے آئے گا اور یہ اچھی علامت نہیں ہوگی ۔۔

TOPPOPULARRECENT