Saturday , November 25 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کالیشورم پراجکٹ کی تعمیر سے پینے کے پانی کی سربراہی

کالیشورم پراجکٹ کی تعمیر سے پینے کے پانی کی سربراہی

میدک میں ڈپٹی اسپیکر پدمادیویندر ریڈی کا صحافیوں سے خطاب

میدک ۔ /11 مئی (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی حکومت نے کالیشورم پراجکٹ کی تعمیر کرکے ریاست کے 5 اضلاع کو زرعی مقاصد اور پینے کیلئے پانی کی سربراہی کا منصوبہ بنایا ہے ۔ اس مجوزہ پراجکٹ کی تعمیر کیلئے تلنگانہ سرکار مہاراشٹرا حکومت سے ایک معاہدہ بھی کرلیا ہے ۔ اس پراجکٹ کی تعمیر کیلئے حکومت نے 25 ہزار کروڑ روپئے صرف کرے گی ۔ اپوزیشن کانگریس کا کہنا غلط ہے کہ اس پراجکٹ کی تعمیر کیلئے حکومت مہاراشٹرا سے کوئی معاہدہ ہی نہیں ہوا ۔ کانگریس اس طرح کی اوچھی حرکت غیر ضروری بیانات جاری کرتے ہوئے عوام کو گمراہ کررہی ہے ۔ کے سی آر ریاست کو سرسبز شاداب بنانے کیلئے ایک منصوبہ کے ساتھ کام کررہے ہیں ۔ اپوزیشن جماعت محض اپنی تشہیر کیلئے حکومت تلنگانہ کے خلاف بیان بازی کررہی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی ڈپٹی اسپیکر قانون ساز اسمبلی محترمہ ایم پدما دیویندر ریڈی نے میدک میں اپنے چیمبر میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پیشرو حکومتوں نے گزشتہ 60 سالوں سے ریاست میں کوئی آبی پراجکٹ تعمیر نہیں کئے ۔ گزشتہ 60 سالوں سے تلنگانہ علاقہ سوتیلا طرز عمل کا شکار ہے ۔ علاوہ ازیں حکومت ملنا ساگر آبی پراجکٹ کے ذریعہ میدک اور نرساپور کو سرسبز شاداب بنانے کا منصوبہ بنایا ہے ۔ میدک اور نرساپور کی 6/50 لاکھ ایکڑ اراضی کو قابل کاشت بنایا جائے گا ۔ آخر میں انہوں نے کہا کہ ضلع کھمم کی اسمبلی نشست پالیرو پر ٹی آر ایس اپنا قبضہ یقینی طور پر جمالے گی ۔ اس موقع پر صدرنشین بلدیہ مسٹر اے ملکارجن گوڑ ، رکن ضلع پریشد محترمہ لاورینا ریڈی ، بلدی کونسلرس مسرز اے نرسملو اور دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT