Wednesday , November 22 2017
Home / ہندوستان / کالے دھن کی واپسی کیلئے مودی کے بلند بانگ دعوے کھوکھلے

کالے دھن کی واپسی کیلئے مودی کے بلند بانگ دعوے کھوکھلے

مودی حکومت حسب دعویٰ 80 لاکھ کروڑ روپئے حاصل کرنے میں ناکام، عام آدمی پارٹی کی شدید تنقید
نئی دہلی ، 2 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی نے وزیراعظم نریندر مودی کے ان بلند بانگ دعوؤں کو کھوکھلے قرار دیا، جس میں انہوں نے کہا تھا کہ وہ اقتدار پر آتے ہی بیرون ملک پوشیدہ طور پر جمع کیا گیا کالادھن واپس لائیں گے۔ مرکزی حکومت نے صرف ایک بار 3,770 کروڑ روپئے کو برآمد کرکے یہ ثابت کردیا کہ انہوں نے انتخابات سے قبل 80 لاکھ کروڑ روپئے برآمد کرنے کا جو وعدہ کیا تھا اس میں وہ بُری طرح ناکام ہوچکے ہیں۔ عام آدمی پارٹی نے مزید کہا کہ مودی نے انتخابات سے قبل وعدہ کیا تھا کہ وہ کالادھن واپس لاکر ملک کے ہر شہری کے بینک اکاؤنٹ میں 15 لاکھ روپئے جمع کروائیں گے۔ ’’اب اتنی رقم تو برآمد کرنے میں ناکامی کے بعد این ڈی اے حکومت کو محض 18.62 روپئے جمع کرانے پر غور کرنا چاہئے۔‘‘ عام آدمی پارٹی کے ترجمان راگھو چڈھا نے نریندر مودی کے لوک سبھا انتخابات میں مہم کے دوران کی گئی تقاریر کا حوالہ دیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ اگر انہیں اقتدار مل گیا تو وہ 80 لاکھ کروڑ روپئے کے کالے دھن کو برآمد کریں گے۔ یہ رقم بیرونی ملکوں کے بینکوں میں رکھی گئی ہے۔ ان کی حکومت یہ کالادھن اپنے اقتدار کے ابتدائی 100 دن کے اندر لائے گی۔ انہوں نے مودی پر زور دیاکہ انہیں اپنی اس تاریخی ناکامی کو تسلیم کرنا ہوگا اور یہ بھی قبول کرنا ہوگا کہ وہ حسب وعدہ ہر شہری کے اکاؤنٹ میں 15 لاکھ روپئے ڈپازٹ کرانے میں ناکام ہوئے ہیں۔ چڈھا نے دعویٰ کہ اندرون ملک کالے دھن کے معاملہ میں قانون خاموش ہے۔ ملک کے اندر ہی 90 فیصد کالادھن رکھا گیا ہے جبکہ بیرونی ملکوں میں صرف 10 فیصد ہے۔ بلند بانگ دعوؤں کے باوجود سیاسی عزم کے فقدان کے باعث مختلف تحقیقاتی ایجنسیاں کالے دھن کے معاملہ پر ایس آئی ٹی سے تعاون نہیں کررہی ہیں، جس کو سپریم کورٹ کے حکم کے بعد تشکیل دیا گیا ہے۔ اسی دوران پارٹی لیڈر اشوتوش نے دادری قتل مسئلہ پر وزیراعظم کی خاموشی کا سوال اٹھایا اور مرکزی وزیر ثقافت مہیش شرما کی برطرفی کا مطالبہ کیا۔ ’’وزیراعظم اپنے خطاب میں ہر وقت ’سب کا ساتھ سب کا وکاس‘ کہتے رہے ہیں تو پھر مہیش شرما مرکزی کابینہ میں برقرار رکھنے کا حق نہیں رکھتے۔ ‘‘

TOPPOPULARRECENT