Sunday , January 21 2018
Home / کھیل کی خبریں / کامیابی کی سمت گامزن ہندوستان کو ڈرامائی شکست

کامیابی کی سمت گامزن ہندوستان کو ڈرامائی شکست

اڈیلیڈ۔13ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ویراٹ کوہلی نے اپنی ریکارڈ سنچری اور اوپنر مرلی وجئے کے ہمراہ تیسری وکٹ کیلئے 185رنز کی پارٹنرشپ نبھاتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف یہاں پہلے ٹسٹ کے آخری دن ٹیم کو ایک یادگار کامیابی کی سمت گامزن کرچکے تھے ‘ نیز ایک موقع پر ہندوستانی ٹیم 69اوورس میں 242/2 کے آرام دہ مقام پر موجود تھی لیکن اچانک یہاں سے اس کی ڈرا

اڈیلیڈ۔13ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ویراٹ کوہلی نے اپنی ریکارڈ سنچری اور اوپنر مرلی وجئے کے ہمراہ تیسری وکٹ کیلئے 185رنز کی پارٹنرشپ نبھاتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف یہاں پہلے ٹسٹ کے آخری دن ٹیم کو ایک یادگار کامیابی کی سمت گامزن کرچکے تھے ‘ نیز ایک موقع پر ہندوستانی ٹیم 69اوورس میں 242/2 کے آرام دہ مقام پر موجود تھی لیکن اچانک یہاں سے اس کی ڈرامائی شکست کا آغاز ہوا اور مابقی 8وکٹیں 73رنز کے اضافہ پر پویلین لوٹ گئی اور ساری ٹیم دوسری اننگز میں 315رنز پر ڈھیر ہوگئی جب کہ وہ کامیابی کیلئے 364رنز کا تعاقب کررہی تھی ۔ آسٹریلیا نے آخری سیشن میں غیر معمولی بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 48رنز کی کامیابی حاصل کی اور چار مقابلوں کی سیریز میں 1-0کی سبقت حاصل کرلی ۔

ویراٹ کوہلی بحیثیت کپتان پہلے ٹسٹ کی دونوں اننگز میں سنچریاں اسکور کرنے والے ہندوستانی ٹسٹ تاریخ کے دوسرے کپتان بنے ہیں ۔ ویراٹ نے 175 گیندوں میں 16چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 141رنز اسکور کئے جب کہ مرلی وجئے شاندار اننگز کھیلنے کے بعد 99رنز پر آؤٹ ہوئے اور ان کی وکٹ ہی ہندوستانی شکست کے آغاز کا سبب بنی ۔ وجئے نے 234گیندوں کی اننگز میں 10چوکے اور دو چھکے لگائے ۔ آسٹریلیائی ٹیم کی کامیابی کے معمار آف اسپنر نیتھن لیون بنے جنہوں نے 152رنز کے عوض 7وکٹیں حاصل کیں جب کہ پہلی اننگز میں انہوں نے 134رنز کے عوض پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا اور مجموعی طور پر مقابلے میں 286رنز کے عوض 12وکٹیں حاصل کرتے ہوئے میان آف دی میچ کا اعزاز حاصل کیا ۔

قبل ازیں آسٹریلیائی ٹیم نے اپنے کل کے اسکور 290/5 پر اپنی دوسری اننگز ڈیکلیر کرتے ہوئے ہندوستان کو کامیابی کیلئے 364رنز کا نشانہ دیا ۔ہندوستانی ٹیم نے آج اپنی دوسری اننگز کا آغاز نشانہ کے تعاقب کے ذریعہ کیا لیکن اس کے دوسرے اننگز کا آغاز بھی مایوس کن رہا جیسا کہ 16 کے مجموعی اسکور پر شکھر دھون 8گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے 9رنز بناکر میچل جانسن کی گیند پر وکٹوں کے پیچھے آؤٹ ہوئے ۔ چیٹیشور پجارا (21) نے مرلی وجئے کے ہمراہ دوسری وکٹ کیلئے 41رنز کی پارٹنرشپ نبھائی ۔اس موقع پر لیون نے پجارا کو آؤٹ کرتے ہوئے یہ پارٹنرشپ توڑی ۔ مڈل آرڈر میں کسی بھی بیٹسمین نے ٹیم کیلئے بہتر مظاہرہ نہیں کیا

جیسا کہ اجنکیا رہانے پانچ گیندوںمیں کوئی رن نہیں بناپائے جب کہ روہت شرما18گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے 6رنز بنائے جب کہ وکٹ کیپر بیٹسمین وردھیمان ساہا نے 10گیندوںمیںایک چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے 13رنز اسکور کئے ۔ آخری صف کے بیٹسمینوں کو میزبان بولروں نے بہ آسانی پویلین کی راہ دکھائی ۔ کرن شرما (4) ‘ محمد سمیع (5)‘ ورن ارون (1)اور ایشانت شرما (1) رنز بناکر پویلین کی راہ اختیار کی ۔ آخری دن کے ابتدائی دو سیشنوں میں شاندار مظاہرہ کرنے کے بعد آخری سیشن میں ایک تاریخ ساز کامیابی کی امید کے ساتھ ویراٹ کوہلی اور مرلی وجئے نے میدان سنبھالا تھا تاہم نتائج کچھ اور ہی حاصل ہوئے ۔کوہلی نے 1975-76ء میں ویسٹ انڈیز کے خلاف گریک چیپل کے ریکارڈ کی برابری کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT