Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / ’’کام کرونگا اور نہ کرنے دونگا ‘‘ مودی کا نیا نعرہ

’’کام کرونگا اور نہ کرنے دونگا ‘‘ مودی کا نیا نعرہ

چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال کی وزیراعظم نریندر مودی پر تنقید
نئی دہلی، 14 جون (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کے وزیراعلی اروند کجریوال نے صدر پرنب مکرجی کی جانب سے دہلی سرکار کے پارلیمانی سکریٹری جل کو واپس کئے جانے کے مسئلہ پر وزیر اعطم نریندر مودی پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا ہے کہ وہ نہیں چاہتے کہ دہلی سرکار کسی بھی طرح کام کرے ۔ مسٹر کجریوال نے آج یہاں اخباری نمائندوں سے کہا کہ مسٹر مودی دہلی میں بی جے پی کی ہار کو ہضم نہیں کرپائے ہیں اور اس لئے دہلی سرکار کے کام کاج میں ہروقت روکاوٹیں کھڑی کرتے رہتے ہیں ۔ وزیراعظم نریندر مودی کا آج کل نیا نعرہ ہے ’’نہ میں کام کروں گا اور نہ کرنے دوں گا‘‘۔ انہوں نے قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے ) سرکار پر الزام لگایا کہ وہ دہلی سرکار کے ساتھ متعصب رویہ اپنا رہی ہے ملک کی دیگر ریاستوں کو پارلیمانی سیکریٹری کا عہدہ رکھنے کی اجازت ملی ہوئی ہے لیکن دہلی کو اس کی اجازت نہیں دی جارہی۔ انہوں نے کہا کہ اسے دوہرے فائدے والا عہدہ بتایا جارہا ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ انکے یہ ممبر اسمبلی پارلیمانی سکریٹری کے طور پر فاضل کام تو کررہے ہیں لیکن اس کے عوض انہیں ایک روپیہ بھی نہیں دیا جارہا ہے ۔ انہوں نے استفہامیہ لہجہ میں کہا کہ ہریانہ، ناگالینڈ، راجستھان، پنجاب اور گجرات سمیت کئی ریاستوں میں پارلیمانی سکریٹری کا عہدہ سے پھر آخر ایسی کیا بات ہے کہ مودی جی کو دلی کے پارلیمانی سکریٹریوں کو لے کر اعتراض ہے ۔ مسٹر کجریوال نے کہا کہ بل کو صدر کی طرف سے لوٹایا جانا محض ایک بہانہ ہے اور ساری کارستانی وزارت داخلہ کی ہے جو مسٹر مودی کے اشارے پر کام کر رہے ہیں۔ عام آدمی پارٹی (آپ) کے 21 ممبران اسمبلی کو دہلی سرکار نے پارلیمانی سکریٹری کا عہدہ دے رکھا ہے ۔ اس سے متعلق بل صدر کے پاس منظوری کے لئے بھیجا گیاتھا لیکن صدر نے اسے لوٹا دیا۔ یہ بل دہلی سرکار کی جانب سے گزشتہ برس اسمبلی میں پیش کیا گیاتھا تاکہ پارٹی اپنے 21 ممبران اسمبلی کو نااہل ٹھہرائے جانے سے بچا سکے صدر کی جانب سے یہ بل واپس کئے جانے سے آپ کے ان 21 ممبران اسمبلی کا مستقبل مہم میں لٹک گیا ہے ۔ انہیں یا تو یہ عہدہ چھوڑنا پڑے گا یا پھر ان کی رکنیت منسوخ ہوجائے گی۔

TOPPOPULARRECENT