Monday , June 25 2018
Home / سیاسیات / کانگریسی چیف منسٹرس سے دستور کے وقار کی خلاف ورزی نہ کرنے کی خواہش

کانگریسی چیف منسٹرس سے دستور کے وقار کی خلاف ورزی نہ کرنے کی خواہش

نئی دہلی 21 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج کانگریس کے چیف منسٹرس کو یاد دہانی کی کہ وہ دستور کے وقار کو برقرار رکھیں۔ چیف منسٹر مہاراشٹرا چاوان اور دیگر چیف منسٹرس کا وزیراعظم کی تقاریر سے دوری اختیار کرنے کا فیصلہ بدبختانہ ہے۔ برسر اقتدار پارٹی نے یہ بھی کہاکہ کانگریسی چیف منسٹرس کو ’’مقبولیت کی وجہ سے پیدا ہونے والے نفسیاتی

نئی دہلی 21 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج کانگریس کے چیف منسٹرس کو یاد دہانی کی کہ وہ دستور کے وقار کو برقرار رکھیں۔ چیف منسٹر مہاراشٹرا چاوان اور دیگر چیف منسٹرس کا وزیراعظم کی تقاریر سے دوری اختیار کرنے کا فیصلہ بدبختانہ ہے۔ برسر اقتدار پارٹی نے یہ بھی کہاکہ کانگریسی چیف منسٹرس کو ’’مقبولیت کی وجہ سے پیدا ہونے والے نفسیاتی امراض‘‘ کا شکار نہیں ہونا چاہئے۔ برسر اقتدار پارٹی نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی عوامی آدمی ہیں اور کانگریس مودی کے شہ نشین کو نظرانداز کرسکتی ہے لیکن وہ اُن کی اچھی حکمرانی اور ترقی کو نظرانداز نہیں کرسکتی۔ بی جے پی نے کہاکہ وزیراعظم عوام کو اپنے برسر عام اظہار خیال سے نہیں روک سکتے۔ بی جے پی نے کہاکہ منفی سیاست سے کانگریس کو کوئی فائدہ نہیں پہونچے گا۔ بی جے پی کے ترجمان شاہنواز حسین نے کہاکہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ کانگریس چیف منسٹرس کی ریاستوں میں جہاں عنقریب انتخابات ہونے والے ہیں، ذہنی دباؤ پیدا ہوگیا ہے۔

اُنھیں اِس بات کا خیال رکھنا چاہئے کہ دستور کے احترام کی خلاف ورزی نہیں ہوتی۔ اُنھیں وزیراعظم نریندر مودی کی عوامی مقبولیت سے پیدا ہونے والے ذہنی دباؤ کا شکار نہیں ہونا چاہئے۔ نائب صدر بی جے پی مختار عباس نقوی نے کہاکہ اِس قسم کی منفی سیاست سے کانگریس کو کوئی فائدہ نہیں پہونچے گا۔ اُنھوں نے کہاکہ کانگریس مودی کے شہ نشین کو نظرانداز کرسکتی ہے لیکن اُن کی اچھی حکمرانی اور ترقی کو نظرانداز نہیں کرسکتی۔ کانگریس نے گزشتہ انتخابات میں اپنی شرمناک ناکامی کے بعد بھی حقیقت کا احساس نہیں کیا ہے۔ کانگریسی ارکان اپنا چہرہ صاف کرنے کے بجائے آئنہ صاف کررہے ہیں۔ دریں اثناء کانگریس نے کہاکہ وہ چیف منسٹر مہاراشٹرا پرتھوی راج چاوان کے فیصلہ کی تائید کرتی ہے جنھوں نے ناگپور میں وزیراعظم نریندر مودی کے جلسہ میں شرکت کرنے سے گریز کیا ہے۔ کانگریس نے کہاکہ اُن کا یہ فیصلہ بالکل درست ہے کیونکہ وزیراعظم کی تقاریب میں وزرائے اعلیٰ سے جس قسم کا سلوک کیا جارہا ہے

اِس کے پیش نظر چاوان کا یہ فیصلہ درست قرار پاتا ہے۔ مہاراشٹرا پردیش کانگریس کے صدر مانک راؤ ٹھاکرے نے کہاکہ ریاستی کانگریس کمیٹی ناگپور کی تقریب میں وزیراعظم کے ساتھ شرکت نہ کرنے کے چیف منسٹر چاوان کے فیصلہ کی بھرپور تائید کرتی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ مہاراشٹرا کے چیف منسٹر کا عہدہ ایک باوقار عہدہ ہے چاہے اُس پر کسی بھی پارٹی کا سیاستداں فائز ہو۔ ایسا کوئی رویہ جس سے مہاراشٹرا کا وقار مجروح ہوتا ہو یا مہاراشٹرا کی توہین ہوتی ہو تو چیف منسٹر ایسی تقاریب میں شرکت سے گریز کرسکتا ہے۔ ہفتہ کے دن شولاپور میں ایک تقریب میں جہاں وزیراعظم نے قومی شاہراہ نمبر 9 کا افتتاح کیا تھا، چیف منسٹر چاوان کو تقریر کے درمیان روک دیا گیا کیونکہ بی جے پی کے حامی مودی کے نام کے نعرے لگانے لگے تھے۔ ٹھاکرے نے کہاکہ یہ حیرت انگیز ہے کہ وزیراعظم نے اُن کی موجودگی میں ایسا واقعہ پیش آنے کے باوجود بھی خاموشی اختیار کی۔

TOPPOPULARRECENT