Saturday , November 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کانگریس اقلیتی کا اجلاس افراتفری کی نذر

کانگریس اقلیتی کا اجلاس افراتفری کی نذر

کریم نگر /2 جون ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع مستقر ڈی سی سی دفترا ندرا بھون میں ضلعی سطح کے مسیع تر پارٹی اجلاس میں دلت ریاستی قائد سابق چیف وہپ رکن اسمبلی آرے پلی موہن اور ڈسٹرکٹ کانگریس کمیٹی کے صدر کنکم مرتنجم کے درمیان لفظی تکرار ہوئی ۔ آرے پلی موہن نے بھی سخت قسم کے الزامات لگاتے ہوئے تنقید کی اور شہ نشین پر بیٹھ گئے ۔ کنکم مرتنجم نے بھی تنقید سوال کا جواب دوں گا اور انہیں مقصور وار ثابت کروانیکا دعوی کیا جس کی وجہ اجلاس میں افراتفری کا ماحول پیدا ہوگیا ۔ 2019 ء کے اسمبلی حلقوں میں پھر سے ایکبار کامیابی کیلئے لائحہ عمل تیار کرنے اور منصوبہ بندی کیلئے تجاویز اور مشوروں کیلئے اس اجلاس کا دوپہر تین بجے انعقاد عمل میں آیا تھا ۔ اس اجلاس میں ٹی پی سی سی مشاورتی کمیٹی کے ارکان ٹی جیون ریڈی ، سابق رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر جی ویویکانندہ ٹی پی سی سی نائب صدر پونم پربھاکر پارٹی ضلع انچارج پی نرسمہا ریڈی ریاستی جنرل سکریٹری مہیش کمار گوڈ اور عظمی شاکر ، چیلمڈہ لکشمی نرسمہا راؤ اور وینوگوپال کے ساتھ سکریٹریز صدور اور پارٹی کے کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی ۔ اجلاس کے آغاز میں چند کارکنوں نے مشورہ دیا کہ پارٹی میں گروپ بندی نہ ہوسکیں ۔اس پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی تھی ۔ ٹی آر ایس نے جو تیقنات دئے تھے ۔ اس پر عمل آوری نہیں ہو رہی ہے ۔ ایس سی سیل صدر آرے پلی موہن نے انتباہ دیا کہ پارٹی کارکنوں کے مشوروں پر توجہ نہ دی جائے گی تو پارٹی کا نام ونشان ہی باقی نہیں رہے گا ۔ آج کل میری بے عزتی کی جارہی ہے ۔ اس طریقہ کار کو بدلنا ہوگا ۔ بصورت دیگر سونیاگاندھی کو شکایت کرودوں گا کہہ کر انتہائی برہمی کے ساتھ ڈی سی سی صدر کی جانب دیکھتے ہوئے کہا ۔ دلت کی تمہارے پاس کوئی حیثیت ہی نہیں ۔ ریاستی صدر نے کہا کہ میری عزت گاندھی بھون میں نہیں ہے میرے استقبال اور خیرمقدم کیلئے بیانر لگانے پر ان کارکنوں کو دھمکایا گیا ۔ آج کے منعقدہ اجلاس کے دعوت نامے میں یا اخبارات میں میری مثرت کا ذکر تک نہیں ہے ۔ نہ تہماری غیر ذمہ داری نہیں ہے ۔ اس طرح کی بے عزتی قابل برداشت نہیں ہوگی۔ اس درمیان ریاستی مبصر نے مداخلت کرتیہ وئے بحث و تکرار کو ختم کردینے کیلئے کہا ۔ پورے اجلاس میں سنسنی پھیل گئی ۔ پونم پربھاکر نے کہا کہ پارٹی میں اندرونی اختلافات ہوتو بیٹھ کر بات چیت کرکے اس مسئلہ کو حل کیا جائے گا ۔ کارکنوں کے سامنے اس طرح کی حرکت ٹھیک نہیں ہے ۔ اجلاس میں شرکت نہ کرتے ہوئے رکاوٹیںپیدا کرنے والوں پر ہم خاموشی اختیار نہیں کریں گے ۔ اس موقع پر سلیم پاشاہ ، لکشمن کمار ، رمیش ، چنی درمیا ، رگھولا بائی رمیا ، بوما سری رام چکرورتی ، کے راج شیکھر ، روی ، مدھو ، پدما ناگی شیکھر ، سریندر ، انجی پرساد ، گنڈے مادھوی ، مہیش ، انجن کمار ، آکولا پرکاش ، لنگا مورتی ، شیکھر ، منوہر ریڈی کے علاوہ دیگر کارکنوں موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT