کانگریس امیدوار کیخلاف الیکشن کمیشن میں بی جے پی کی شکایت

نئی دہلی، 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے گجرات سے کانگریس کے راجیہ سبھا امیدوار نارائن بھائی رٹھوا کے خلاف الیکشن کمیشن کا دروازہ کھٹکھٹایا ہے ۔ پارٹی کے سینئر رہنماؤں مرکزی وزیر پیوش گوئل، روی شنکر پرساد اور مختار عباس نقوی نے منگل کودیر رات الیکشن کمیشن پہنچ کر رٹھوا اور کانگریس حمایت یافتہ آزاد امیدوار پی کے ولیرا کو نااہل قرار دینے کا مطالبہ کیا۔ بی جے پی نے شکایت کی ہے کہ معاملہ مکمل جانچ پڑتال کی جانی چاہئے کہ یہ سرٹیفکیٹ نارائن بھائی رٹھوا کے پاس پہلے کہاں سے آیا اور کیا انہوں نے نامزدگی میں فرضی سرٹیفکیٹ تو نہیں لگایا تھا۔ الیکشن کمیشن سے ملاقات کے بعد مسٹر گوئل نے نامہ نگاروں سے کہاکہ ہم نے کمیشن کو کانگریس کے راجیہ سبھا امیدوار نارائن بھائی رٹھوا اور آزاد امیدوار پی کے ولیرا کی نامزدگی فارم بھرنے میں ہونے والی بے ضابطگیوں کے بارے میں معلومات دی ہے ۔ اس کے ساتھ ہی رٹھوا کے حلف نامہ میں ان کے خلاف درج فوجداری مقدمات کی کوئی معلومات نہیں ہے ۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ رٹھوا نے ریلوے کی وزارت سے کوئی ’نو ڈیوز سرٹیفکیٹ‘ نہیں لیا ہے ۔ہم نے لوک سبھا اسپیکر سے معاملہ میں جانچ کے لئے شکایت درج کرائی ہے ۔ انہوں نے اس معاملہ میں دہلی پولیس کی بھی مدد مانگی ہے۔ دوسری طرف کانگریس لیڈر رندیپ سرجے والا نے معاملہ پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ احمد پٹیل کے انتخابات میں بھی ایسے ہی ہتھکنڈے اپنائے تھے ، لیکن ناکام رہے تھے ۔ گجرات میں ہمارے پاس اکثریت دو ممبران پارلیمنٹ کے جیتنے کی ہے ۔ نارائن بھائی رٹھوا کی نامزدگی بالکل صحیح ہے۔ قابل غور ہے کہ 182 ارکان پر مشتمل گجرات اسمبلی میں حکمراں بی جے پی کے پاس 99 اور کانگریس کے پاس 77 ایم ایل اے ہیں اور دونوں پارٹیاں صرف دو ہی امیدوار راجیہ سبھا بھیج سکتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT