Tuesday , June 19 2018
Home / شہر کی خبریں / کانگریس اور ٹی آر ایس ، علاقوں میں گرفت کو مضبوط کرنے میں مصروف

کانگریس اور ٹی آر ایس ، علاقوں میں گرفت کو مضبوط کرنے میں مصروف

ایک دوسرے پر تنقیدیں ، ڈی کے ارونا کا کے سی آر کی ٹکر پر سیاسی طاقت کا مظاہرہ

ایک دوسرے پر تنقیدیں ، ڈی کے ارونا کا کے سی آر کی ٹکر پر سیاسی طاقت کا مظاہرہ

حیدرآباد۔/6مارچ، ( سیاست نیوز) تلنگانہ ریاست کے باقاعدہ قیام سے قبل ہی کانگریس اور ٹی آر ایس قائدین میں علاقہ پر اپنی گرفت مضبوط کرنے کی جدوجہد شروع ہوچکی ہے اور دونوں پارٹیوں کے قائدین کھل کر ایک دوسرے کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں۔ ضلع محبوب نگر میں آج ٹی آر ایس کے سربراہ چندر شیکھر راؤ اور کانگریس کی قائد و سابق وزیر ڈی کے ارونا نے علی الترتیب گدوال اور نارائن پیٹ میں اپنی اپنی طاقت کا مظاہرہ کیا۔ چندرشیکھر راؤ کے گدوال میں جلسہ عام میں خطاب سے قبل ڈی کے ارونا نے نارائن پیٹ میں کانگریس کی جشن تلنگانہ ریالی سے خطاب کیا۔ ارونا نے تلنگانہ تشکیل کا سہرا کانگریس کے سر باندھتے ہوئے کے سی آر کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

ڈی کے ارونا نے یہاں تک کہا کہ شمالی تلنگانہ کے قائدین جنوبی تلنگانہ کے عوام پر راج نہیں کرسکتے۔ انہوں نے حلقہ لوک سبھا محبوب نگر کی ترقی کو نظرانداز کرنے کیلئے کے سی آر کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ کانگریس کی ریالی کے بعد گدوال میں منعقدہ جلسہ عام میں کے سی آر نے ان الزامات کی مذمت کی اور کہا کہ محبوب نگر کے رکن پارلیمنٹ کی حیثیت سے انہوں نے تلنگانہ ریاست حاصل کی ہے۔ انہوں نے محبوب نگر کے کسانوں کے ساتھ ناانصافی کیلئے حکومت کو ذمہ دار قرار دیا۔انہوں نے عوام سے گروہ واری سیاست کے خاتمہ کی اپیل کرتے ہوئے بالواسطہ طور پر ڈی کے ارونا کو نشانہ بنایا۔ اس علاقہ میں ڈی کے ارونا اور ان کے شوہر بھرت سمہا ریڈی کافی اثر رکھتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT