Wednesday , December 12 2018

کانگریس رکن اسمبلی پاٹل نڑہلی کو پارٹی سے برطرف کرنے کی سفارش

گلبرگہ ۔20؍مئی: (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حالیہ دنوں میں شمالی کرناٹک کو علیحدہ ریاست بنانے کا مطالبہ کرنے والے کانگریس رکن اسمبلی اے ایس پاٹل نڑہلی کو کانگریس سے خارج کرنے کیلئے کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی صدر ڈاکٹر جی پرمیشور نے کانگریس اعلیٰ کمان کو مکتوب روانہ کیا ہے۔نڑہلی نے علیحدہ ریاست کی تشکیل کی مانگ کے ساتھ پارٹی مخالف سرگرمیا

گلبرگہ ۔20؍مئی: (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حالیہ دنوں میں شمالی کرناٹک کو علیحدہ ریاست بنانے کا مطالبہ کرنے والے کانگریس رکن اسمبلی اے ایس پاٹل نڑہلی کو کانگریس سے خارج کرنے کیلئے کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی صدر ڈاکٹر جی پرمیشور نے کانگریس اعلیٰ کمان کو مکتوب روانہ کیا ہے۔نڑہلی نے علیحدہ ریاست کی تشکیل کی مانگ کے ساتھ پارٹی مخالف سرگرمیاں بھی شروع کردی تھیں، اور وزیراعلیٰ سدرامیا کے خلاف کھلے عام بیان دیا تھا۔ اسے دیکھتے ہوئے فوری طور پر انہیں کانگریس لیجسلیچر پارٹی سے معطل کردیا گیا۔ کے پی سی سی کی طرف سے انہیں وجہ بتاؤ نوٹس جاری کی گئی ،لیکن اس کا بھی انہوں نے اب تک کوئی جواب نہیں دیا،جس کی پاداش میں ڈاکٹر جی پرمیشور نے اے آئی سی سی سے سفارش کی ہے کہ فوری طور پر انہیں پارٹی سے خارج کرنے کا فیصلہ کیا جائے۔ یہ سفارش اے آئی سی سی جنرل سکریٹری اور کرناٹک امور کے انچارج ڈگ وجئے سنگھ کو روانہ کی گئی ہے۔ نڑہلی نے نہ صرف وزیر اعلیٰ سدرامیا بلکہ وزیر آبی وسائل ایم بی پاٹل اور کرناٹک کے نمائندہ برائے دہلی سی ایس ناڈا گوڈا پر بھی رکیک حملے کئے ہیں۔ اسے دیکھتے ہوئے پارٹی نے ان کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT