Tuesday , November 21 2017
Home / سیاسیات / کانگریس رکن اسمبلی کے خلاف قومی سلامتی ایکٹ کا نفاذ حکومت اترپردیش پر جانبدارانہ کارروائی کا الزام

کانگریس رکن اسمبلی کے خلاف قومی سلامتی ایکٹ کا نفاذ حکومت اترپردیش پر جانبدارانہ کارروائی کا الزام

لکھنو ۔ 15 ۔ اکٹوبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : کانگریس نے آج وارناسی میں 5 اکٹوبر کو پرتیکار یاترا کے دوران پرتشدد واقعات کے سلسلہ میں پارٹی کے ایک رکن اسمبلی اجئے رائے کے خلاف قومی سلامتی ایکٹ نافذ کرنے کی مذمت کی ہے ۔ کانگریس مقننہ پارٹی لیڈر پردیپ ماتھر نے اجئے راج کے خلاف قانون قومی سلامتی کے تحت کیس درج کرنے کی مذمت کرتے ہوئے یہ الزام عائد کیا ہے کہ اترپردیش میں سماج وادی پارٹی حکومت وزیر اعظم نریندر مودی کی تابعدار بن گئی ہے ۔ انہوں نے ایک صحافتی بیان میں کہا کہ کانگریس پارٹی ریاست میں ’ جنگل راج ‘ کی مذمت کرتی ہے ۔ انہوں نے یہ سوال کیا کہ مذکورہ یاترا میں شریک بی جے پی ارکان اسمبلی کے خلاف کیس کیوں درج نہیں کئے گئے ۔ مسٹر ماتھر نے بتایا کہ یہ مسئلہ عوام کے روبرو اٹھایا جائے گا ۔ واضح رہے کہ دریائے گنگا میں گنیش مورتیوں کے وسرجن پر پابندی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرنے پر پولیس نے لاٹھی چارج کردیا ۔ جس کے خلاف سادھوؤں اور مقامی لیڈروں کے دوبارہ احتجاج کے دوران تشدد اور آتشزدگی کے واقعات میں کانگریس رکن اسمبلی کے مبینہ رول پر انہیں گرفتار کرلیا گیا اور انہیں ضلع فتح گڑھ جیل میں محروس کردیا گیا ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT