Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / کانگریس سے اے للیتا ایم ایل سی امیدوار نامزد

کانگریس سے اے للیتا ایم ایل سی امیدوار نامزد

حیدرآباد /20 مئی (سیاست نیوز) کانگریس ہائی کمان نے واحد ایم ایل سی نشست کے لئے پارٹی قائدین میں مسابقت کو پیش نظر رکھتے ہوئے ایک خاتون امیدوار مسز اے للیتا کو نامزد کردیا، جس پر بطور احتجاج ڈی ناگیندر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس کی صدارت سے مستعفی ہو گئے اور ڈگ وجے سنگھ کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے اپنے فیصلہ سے واقف کرایا۔ واضح رہے کہ تلن

حیدرآباد /20 مئی (سیاست نیوز) کانگریس ہائی کمان نے واحد ایم ایل سی نشست کے لئے پارٹی قائدین میں مسابقت کو پیش نظر رکھتے ہوئے ایک خاتون امیدوار مسز اے للیتا کو نامزد کردیا، جس پر بطور احتجاج ڈی ناگیندر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس کی صدارت سے مستعفی ہو گئے اور ڈگ وجے سنگھ کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے اپنے فیصلہ سے واقف کرایا۔ واضح رہے کہ تلنگانہ قانون ساز اسمبلی میں عددی طاقت کے لحاظ سے کانگریس کی ایک نشست پر کامیابی یقینی ہے، تاہم اس نشست کے لئے سابق صدور پردیش کانگریس ڈی سرینواس، پنالہ لکشمیا، سابق وزراء ڈی ناگیندر، مسز سبیتا اندرا ریڈی، مسز سنیتا لکشما ریڈی کے بشمول کانگریس کے 40 قائدین دعویدار تھے اور اس کے لئے پارٹی کے سینئر و جونیر قائدین دہلی میں کیمپ کرکے دل و جان سے کوشش کر رہے تھے۔ لیکن پارٹی قائدین کی دوڑ دھوپ دیکھتے ہوئے کانگریس ہائی کمان نے کسی خاتون کو امیدوار بنانے اور سابق صدر مہیلا کانگریس مسز اے للیتا کو لمحہ آخر میں ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا۔ مسز للیتا کا تعلق ضلع نظام آباد سے ہے، وہ 21 مئی کو صبح گیارہ بجے اپنا پرچہ نامزدگی داخل کریں گی۔ امیدوار بنانے پر مسز للیتا نے صدر کانگریس سونیا گاندھی اور نائب صدر راہول گاندھی سے اظہار تشکر کیا۔ ہائی کمان کے اس فیصلہ سے پارٹی قائدین میں ناراضگی اور مایوسی پائی جا رہی ہے۔ ذرائع کے بموجب مسٹر ناگیندر نے اپنے مکتوب میں تحریر کیا ہے کہ وہ برسوں سے بحیثیت صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس، پارٹی کے استحکام میں مصروف ہیں اور ایم ایل سی نشست کے لئے اپنی دعویداری بھی پیش کرچکے تھے، تاہم ہائی کمان کا یہ فیصلہ پارٹی کے لئے نقصاندہ ثابت ہوسکتا ہے اور مجوزہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں پارٹی کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اگر انھیں ٹکٹ نہیں دیا گیا تو سینئر قائد ڈی سرینواس یا سابق وزیر مسز سبیتا اندرا ریڈی کو دینا چاہئے تھا۔

TOPPOPULARRECENT