Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / ’’کانگریس قائدین پر رکن پارلیمنٹ کی ٹولی نے حملہ کیا تھا ‘‘

’’کانگریس قائدین پر رکن پارلیمنٹ کی ٹولی نے حملہ کیا تھا ‘‘

’’حیدرآباد ایم پی نے حالت برہمی میں کار پر گھونسہ بھی مارا تھا ‘‘ پولیس کی ریمانڈ رپورٹ‘یہ بھی پولیس ‘ وہ بھی پولیس سچاکون جھوٹا کون ؟
حیدرآباد ۔ 8 فبروری ۔ ( سیاست نیوز ) بلدی انتخابات کے دوران پیش آئے پرتشدد واقعات اور میرچوک پولیس کی کارروائی میں گرفتار 4 مجلسی کارکنوں کی ریمانڈ رپورٹ میں یہ واضح طورپر بتایا گیا ہے کہ رکن پارلیمنٹ حیدرآباد نے 40 افراد پر مشتمل ٹولی کی شکل میں کانگریسی قائدین پر حملہ کیا ۔ میرچوک پولیس نے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر اُتم کمار ریڈی ، مسٹر محمد علی شبیر اور پرگی رکن اسمبلی مسٹر رام موہن ریڈی پر ہوئے حملے کے سلسلے میں ایک مقدمہ جس کا کرائم نمبر 14/2016 ہے درج کرتے ہوئے سید عبدہ  قادری عرف کشف ، شیخ عابد ، محمد مسیح الدین اور مصباح الدین خان کو گرفتار کیا تھا اور میر چوک پولیس نے عدالت میں داخل کی گئی ریمانڈ رپورٹ میں یہ دعویٰ کیا ہے کہ رکن پارلیمنٹ نے مسٹر محمد علی شبیر کی کار TS-07EK-0077 جبراً روکا اور شدید برہمی کی حالت میں تین کانگریسی قائدین سے گالی گلوچ کی اور انتباہ دیا کہ ’’تو میرے علاقہ میں کیسے آیا ‘‘ اور گاڑی کی بانٹ پر جم کر مُکا دے مارا ۔ میرچوک پولیس نے اپنی ریمانڈ رپورٹ میںآٹھویں ایڈیشنل چیف میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ کو یہ بتایا کہ رکن پارلیمنٹ اور دیگر سات ملزمین نے ضابطۂ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے غیرقانونی طورپر اکٹھا ہوکر ریالی کی شکل میں میرچوک پولیس اسٹیشن پہونچ کر کانگریس کے قائدین کو سنگین نتائج کا انتباہ دیا۔ پولیس نے عدالت کو یہ بھی واقف کروایا کہ مقام واردات پر کئی میڈیا کے نمائندے موجود تھے اور کئی ٹی وی چینلز کے موجودہ رپورٹر س و کیمرہ مین نے اس ساری واردات کی فلمبندی کی ہے اور اس ویڈیو فوٹیج کی مدد سے خاطیوں کی نشاندہی کی جارہی ہے اور ویڈیو کے حصول کیلئے ٹی وی چینلز کے ذمہ داران سے ربط پیدا کیا گیا ہے ۔ اس کیس کی تحقیقات سے یہ واضح طورپر ظاہر ہوتا ہے کہ میرچوک پولیس نے رکن پارلیمنٹ کو اپنی ابتدائی تحقیقات میں حملہ میں ملوث پایا اور اس سلسلے میں عدالت کو آگاہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT