Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / کانگریس نے گرداسپور نشست بی جے پی سے چھین لی

کانگریس نے گرداسپور نشست بی جے پی سے چھین لی

بی جے پی امیدوار کو 1 لاکھ 93 ووٹوں سے شکست ۔ شاندار کامیابی راہول گاندھی کیلئے دیوالی کا تحفہ ‘ نوجوت سدھو

گرداسپور 15 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) پنجاب میں کانگریس نے اپنی کامیابیوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے گرداسپور لوک سبھا نشست بی جے پی سے چھین لی ہے ۔ کانگریس امیدوار سنیل جاکھر نے اس حلقہ سے بی جے پی امیدوار سوارن سلاریہ کو 1,93,219 ووٹوں کی اکثریت سے شکست سے دو چار کردیا اور بی جے پی کے قبضہ والی نشست چھین لی ہے ۔ واضح رہے کہ گذشتہ دنوں ناندیڑ میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں بھی کانگریس نے بی جے پی کو بری ہزیمت سے دوچار کردیا تھا اور 81 کے منجملہ 73 حلقوں سے کامیابی حاصل کرتے ہوئے تمام مخالفین کا صفایا کردیا تھا ۔ گرداسپور سے ونود کھنہ بی جے پی رکن پارلیمنٹ تھے ۔ اپریل میں ان کے انتقال کے بعد یہ نشست خالی ہوئی تھی اور اس پر اب کانگریس نے کامیابی حاصل کرلی ہے ۔ جاکھر کو یہاں 4,99,752 ووٹ حاصل ہوئے جبکہ سلاریہ کو 3,06,533 ووٹ ہی مل سکے ۔ عام آدمی پارٹی کے امیدوار میجر جنرل ( ریٹائرڈ ) سریش کھجوریہ کو صرف 23,579ووٹ حاصل ہوئے اور وہ تیسرے نمبر پر رہے ۔ ان کی ضمانت ضبط ہوگئی ۔ کانگریس نے 2009 کے بعد اب اس نشست پر کامیابی حاصل کی ہے ۔ 2009 میں یہاں سے کانگریس امیدوار پرتاپ سنگھ باجوا کو کامیابی حاصل ہوئی تھی ۔ اس وقت انہوں نے ونود کھنہ کو شکست دی تھی ۔ ونود کھنہ گرداسپور سے چار مرتبہ رکن پارلیمنٹ رہے تھے ۔ انہوں نے 1998,1999 اور 2004 میں یہاں سے کامیابی حاصل کی تھی ۔ 2014 میں یہ نشست انہوں نے کانگریس کے قبضہ سے چھین لی تھی ۔ کانگریس کی شاندار کامیابی پر پارٹی حلقوں میں مسرت کی لہر دوڑ گئی اور گرداسپور اور دوسرے شہروں میں پارٹی کارکنوں نے جشن منایا ۔

سنیل جاکھر نے اس کامیابی پر رائے دہندوں سے اظہار تشکر کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس کامیابی کے ذریعہ عوام نے پنجاب میں کیپٹن امریندر سنگھ کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے ۔ یہ کامیابی کانگریس اور کیپٹن امریندر سنگھ کی کامیابی ہے ۔ سنیل جاکھر کو کامیابی پر مبارکباد دیتے ہوئے چیف منسٹر پنجاب نے کہا کہ یہ ترقیاتی ایجنڈہ کی کامیابی ہے ۔ انہوں نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے سنیل کو مبارکباد دی اور کہا کہ یہ پنجاب حکومت کی پالیسیوں اور ترقیاتی ایجنڈہ کی جیت ہے ۔ ریاستی وزیر نوجوت سنگھ سدھو نے اس کامیابی کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے سرخ ربن سے لپیٹ کر ایک بہترین دیوالی تحفہ ہمارے ہونے والے صدر راہول گاندھی کو روانہ کیا ہے کیونکہ اس سے ملک میں رائے عامہ کا اظہار ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ کامیابی کانگریس کیلئے شاندار کامیابی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ کامیابی در اصل مخالفین کے منہ پر طمانچہ ہے ۔ اس سے بی جے پی کو سمجھ لینا چاہئے کہ پنجاب میں اکالی دل ایک بوجھ بن گئی ہے ۔ عام آدمی پارٹی اور بی جے پی نے تاہم کانگریس پر اس کامیابی کیلئے سرکاری مشنری کے بیجا استعمال کا الزام عائد کیا ہے ۔ بی جے پی پنجاب کے سکریٹری ونیت جوشی نے الزام عائد کیا کہ کانگریس نے ضمنی انتخابات میں سرکاری مشنری کا بیجا استعمال کیا ہے ۔ عام آدمی پارٹی امیدوار میجر جنرل ( ریٹائرڈ ) سریش کھجوریہ نے بھی کانگریس پر غیر جمہوری طریقے اختیار کرنے کا الزام عائد کیا ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT