Thursday , August 16 2018
Home / شہر کی خبریں / کانگریس وزیراعظم کی مقبولیت سے خائف : چیف منسٹر گجرات

کانگریس وزیراعظم کی مقبولیت سے خائف : چیف منسٹر گجرات

ذات پات کے قائدین پر تکیہ ، ہاردک پٹیل سے اتحاد پر شدید تنقید
احمد آباد ۔ /26 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر گجرات وجئے روپانی نے کانگریس پر الزام عائد کیا کہ وہ گجرات اسمبلی انتخابات میں ذات پرستی میں پناہ لینے کی کوشش کررہیہے اور اپنی مہم میں ذات پات کے قائدین کی آؤٹ سورسنگ کررہی ہے جبکہ انہوں نے کانگریس ۔ ہاردک پٹیل اتحاد سے بی جے پی کے انتخابی امکانات کو کسی خطرے کے امکان کو مسترد کردیا ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ کانگریس ، تحفظات کے مسئلہ پر عوام کو ’’منقسم ‘‘ کررہی ہے جبکہ احتجاجی افراد انتخابی ٹکٹوں کیلئے قطار میں کھڑے ہیں ۔ پٹیل کوٹہ ایجی ٹیشن لیڈر ہاردک پٹیل کی ڈسمبر اسمبلی انتخابات میں کانگریس کی کھلے عام تائید کی ۔ انہوں نے انتخابی اتحاد قرار نہیں دیا بلکہ کہا کہ یہ معاہدہ دونوں جانب سے کیا گیا ہے ۔ 61 سالہ بی جے پی لیڈر نے ہاردک پٹیل کو ’’میڈیا کا پیدا کردہ لیڈر قرار دیا ۔ وجئے روپانی نے کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جو گجرات میں تیزی سے انتخابی مہم چلارہے ہیں ۔ انہوں نے راہول گاندھی کو جھوٹ پھیلانے والا لیڈر قرار دیا اور الزام عائد کیا کہ وہ بی جے پی حکمرانی والی ریاست سے متعلق گمراہ کن اعداد و شمار پیش کررہے ہیں ۔ میں ان کے بارے میں جو کچھ سمجھ پایا ہوں اس پر میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ یہ کانگریس ، ہاردک پٹیل اتحاد بی جے پی کی کامیابی پر کوئی اثر انداز نہیں ہوسکے گا ۔ کیونکہ اس اتحاد نے ہی انہیں آشکار کردیا ہے ۔ انہوں نے اپنے اصل مطالبہ کو یعنی تحفظات کو بالائے طاق رکھدیا ہے اور اب یہ احتجاجی لوگ کانگریس ٹکٹ کے قطار میں کھڑے ہیں ۔ روپانی اس سوال کا جواب دے رہے تھے کہ آیا کانگریس ہاردک پٹیل اتحاد سے گجرات انتخابات میں کانگریس کو فائدہ ہوگا ؟ انہوں نے کہا کہ کانگریس نے پاٹیداروں کو تحفظات کس طرح دے گی ۔ یہ واضح نہیں کیا ہے ۔ اس وضاحت کے بغیر ہی ہاردک پٹیل نے کانگریس کی حمایت کا اعلان کردیا اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ دونوں کے درمیان ’’سودے بازی ‘‘ ہوئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT