Friday , November 24 2017
Home / سیاسیات / کانگریس کا احتجاجی دعا کا پروگرام چیف منسٹر کی دعوت منسوخ کرنے پر کیرالا کانگریس کا اقدام

کانگریس کا احتجاجی دعا کا پروگرام چیف منسٹر کی دعوت منسوخ کرنے پر کیرالا کانگریس کا اقدام

تھرواننتاپورم ۔ 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر کیرالا ویمن چنڈی کو ایک تقریب سے باہر رکھنے پر کیونکہ وزیراعظم نریندر مودی اس موقع پر سابق چیف منسٹر آر سنکر کا ایک مجسمہ کولم کے مقام پر بے نقاب کرنے والے تھے۔ احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے کانگریس نے آج کیرالا میں برسراقتدار یو ڈی ایف کا ایک احتجاجی دعائیہ پروگرام آنجہانی قائد کے مجسمہ کے روبرو منعقد کیا۔ ’’پراتھنا سنگمم‘‘ (دعائیہ اجلاس) تقریباً اسی وقت منعقد کیا گیا جبکہ وزیراعظم نے کولم میں سنکر کے مجسمہ کی نقاب کشائی کی تھی۔ وزیرداخلہ کیرالا رمیش چننی تھالا چیف منسٹر ویمن چنڈی کلکتہ پردیش کانگریس کے صدر وی ایم سدھیرن اس دعائیہ پروگرام میں شریک تھے۔ سنکر کے فرزند موہن سنکر اپنی بہن کے ساتھ اجلاس میں شریک ہوئے۔ انہوں نے وزیراعظم کی تقریب کا بائیکاٹ کیا تھا۔ اس موقع پر تقریر کرتے ہوئے چیف منسٹر ویمن چنڈی نے کہا کہ یہ انتہائی بدبختانہ بات ہے کہ ایک تنازعہ منتظمین (ایس این ڈی پی) نے کھڑا کیا ہے جبکہ سدھیرن نے کہا کہ ایس این ڈی پی کے جنرل سکریٹری ویلا پلی نٹیسن نے سنکر کی توہین کی ہے۔ آر ایس ٹی رکن پارلیمنٹ این آر پریم چندرن ،کولم کے میئر ایڈوکیٹ راجندر بابو، سی پی آئی ایم کے رکن اسمبلی پی کے گروداسن نے بھی شرکت کی۔ ان افراد نے بھی مجسمہ کی نقاب کشائی کی تقریب کا بائیکاٹ کیا تھا۔ تنازعہ اس وقت اٹھ کھڑا ہوا جبکہ سری نارائن دھرم پریپالنا یوگم نے چیف منسٹر کو تقریب میں شرکت سے منع کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT