Thursday , December 13 2018

کانگریس کا تلنگانہ تحریک کی تنظیموں اور جماعتوں سے سیاسی اتحاد کا تیقن

سی پی آئی قائد ڈاکٹر کے نارائنا کی ڈگ وجے سنگھ سے ملاقات، سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال

سی پی آئی قائد ڈاکٹر کے نارائنا کی ڈگ وجے سنگھ سے ملاقات، سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال

حیدرآباد /14 مارچ (سیاست نیوز) سی پی آئی قائد ڈاکٹر کے نارائنا نے ڈگ وجے سنگھ سے ملاقات کی اور تازہ سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر تلنگانہ پردیش کانگریس کے صدر پنالہ لکشمیا بھی موجود تھے۔ اس دوران کانگریس کے جنرل سکریٹری ڈگ وجے سنگھ نے کہا کہ سیاسی اتحاد کا فیصلہ انٹونی کمیٹی کرے گی۔ ذرائع کے بموجب ڈاکٹر نارائنا نے سیاسی اتحاد کے لئے چند مطالبات پیش کئے، تاہم ڈگ وجے سنگھ نے پارٹی قائدین سے تبادلہ خیال کے بعد سنجیدگی سے غور کرنے اور تلنگانہ تحریک میں شامل جماعتوں اور تنظیموں کو مذاکرات کے لئے تیار رہنے کا تیقن دیا۔ بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر نارائنا نے کہا کہ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل میں ڈگ وجے سنگھ نے اہم رول ادا کیا ہے، جن سے خیر سگالی ملاقات کرتے ہوئے ہم نے تلنگانہ ریاست کی تشکیل پر اظہار تشکر کیا، تاہم ہمارے درمیان کوئی سیاسی بات چیت نہیں ہوئی۔

انھوں نے تلنگانہ اور سیما۔ آندھرا کی ترقی کے لئے کلیدی رول ادا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ دریں اثناء عوامی تنظیموں کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے صدر جی کانتم نے اپنے حامیوں کے ساتھ ڈگ وجے سنگھ سے ملاقات کرتے ہوئے کانگریس میں شمولیت اختیار کرلی۔ ذرائع کے بموجب ڈگ وجے سنگھ نے انھیں اسمبلی حلقہ چپاڈنڈی (ضلع کریم نگر) سے کانگریس کا ٹکٹ دینے کا تیقن دیا ہے۔ اس دوران جی کانتم نے کہا کہ کانگریس نے اپنے وعدہ کو پورا کیا ہے، اس لئے وہ کانگریس میں شامل ہو رہے ہیں۔ انھوں نے سربراہ ٹی آر ایس کے چندر شیکھر راؤ کو وعدہ کے مطابق اپنی جماعت کو کانگریس میں ضم کرکے علحدہ تلنگانہ ریاست کی تعمیر نور میں کانگریس سے تعاون کا مشورہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT