Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کی بارہا شکست سے پارٹی کیڈر میں مایوسی

کانگریس کی بارہا شکست سے پارٹی کیڈر میں مایوسی

گروپ بندیاں پھر ایکبار عروج پر ، تشکیل تلنگانہ کانگریس کے لیے بے فیض ثابت
حیدرآباد ۔ 17 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : مسلسل شکستوں کے بعد کانگریس کیڈر میں مایوسی پائی جاتی ہے ۔ پارٹی میں گروپ بندیاں پھر سے سرگرم ہوگئی ہیں اور قیادت میں تبدیلی کا مطالبہ کرتے ہوئے ہائی کمان کو فیکس اور مکتوبات روانہ کی جارہی ہیں گذشتہ 20 ماہ میں دو لوک سبھا میدک اور ورنگل اور ایک اسمبلی حلقہ نارائن کھیڑ کے ضمنی انتخابات کے علاوہ جی ایچ ایم سی میں کانگریس پارٹی کی شکست کے بعد کانگریس کیڈر میں مایوسی چھا
گئی ہے ۔ علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دینے کے باوجود کانگریس کو فائدہ نہ پہونچنے پر پارٹی کے سینئیر قائدین سے کانگریس ہائی کمان ناراض ہے ۔ 20 ماہ کے دوران 4 انتخابات میں کانگریس کی شکست کے بعد کانگریس پارٹی میں قائدین کے درمیان پائے جانے والے نظریاتی اختلافات پھر ایک بار منظر عام پر آگئے ہیں اور کانگریس پارٹی پھر سے گروپ بندیوں کا شکار ہوگئی ہے ۔ کانگریس پارٹی کے قائدین پارٹی کی ان شکستوں کے لیے جہاں موجودہ قیادت کو ذمہ دار قرار دے رہے ہیں ۔ وہیں دوسری جانب موقع کی نزاکت سے فائدہ اٹھانے اور اپنے نظریاتی اختلافات کو ہتھیار بناتے ہوئے اعلیٰ عہدوں پر فائز قائدین کو شکست کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے پارٹی صدر مسز سونیا گاندھی اور نائب صدر راہول گاندھی کو مکتوبات اور فیکس روانہ کرتے ہوئے انہیں عہدوں سے ہٹانے اور ان کی جگہ دوسرے قائدین کو ذمہ داریاں سونپنے کی مانگ کررہے ہیں ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ پارٹی ہائی کمان نے اپنی ٹیم کے ذریعہ بھی تحقیقاتی رپورٹ طلب کی ہے ۔ ہائی کمان کے چند نمائندے حیدرآباد میں دو تین دن تک قیام کرتے ہوئے اپنی شناخت ظاہر کئے بغیر سماج کے مختلف طبقات ، ماہرین تعلیم ، طلبہ و دوسروں سے ملاقات کرتے ہوئے انتخابی عمل اس کے نتائج پارٹی قائدین کی کارکردگی اور شکایت و تجاویز پیش کرنے والوں کے بارے میں بھی معلومات حاصل کرتے ہوئے ہائی کمان کو رپورٹ پیش کردی ہے ۔ کانگریس ہائی کمان اس پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے ۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ پارٹی ہائی کمان پر پردیش کانگریس کمیٹی قیادت میں تبدیلی لاتے ہوئے کسی بی سی طبقہ کے قائد کو صدر بنانے پر زور دیا جارہا ہے ۔ ہائی کمان قیادت میں تبدیلی کریں یا پردیش کانگریس عاملہ تشکیل دیتے ہوئے پارٹی قائدین میں ذمہ داریاں تقسیم کریں اس پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے ۔ بہت جلد کوئی نہ کوئی فیصلہ ہونے کا امکان ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT