Monday , October 22 2018
Home / Top Stories / کانگریس کی خاموش لہر میںٹی آر ایس بہہ جائے گی : اتم کما ر ریڈی

کانگریس کی خاموش لہر میںٹی آر ایس بہہ جائے گی : اتم کما ر ریڈی

صرف ایک خاندان کیلئے ریاست سنہرا تلنگانہ ‘ دلتوں پر مظالم میں اضافہ ۔ منتھنی میں پرجا چیتنیہ یاترا سے خطاب

حیدرآباد 3 اپریل (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی نے دلتوں کے احتجاج کی تائید و حمایت کرتے ہوئے کہاکہ دلتوں کے ساتھ امتیاز برتنے کے معاملے میں ٹی آر ایس حکومت ملک بھر میں سرفہرست ہے۔ منتھنی میں پرجا چیتنیہ یاترا کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کہاکہ ٹی آر ایس حکومت تمام محاذوں پر ناکام ہوچکی ہے۔ سماج کا کوئی طبقہ حکومت کی چار سالہ کارکردگی سے مطمئن نہیں ہے۔ ریاست میں جب بھی انتخابات ہونگے کانگریس کی خاموش لہر چلے گی جس میں ٹی آر ایس بہہ جائے گی۔ تحریک کے دوران عوام کو سنہرے تلنگانہ کا خواب دکھاکر کے سی آر نے اپنے خاندان کیلئے سنہرے تلنگانہ میں تبدیل کردیا۔ جن مقاصد کی تکمیل کیلئے علیحدہ تلنگانہ تشکیل دی گئی تھی، اس کو فراموش کردیا۔ تلنگانہ میں اچھے دن ایک ہی خاندان کے آئے ہیں۔ ریاست اور مرکز میں بہت جلد تبدیلی آئیگی۔ ٹی آر ایس حکومت میں وقفہ وقفہ سے دلتوں پر حملے ہورہے ہیں ان کی توہین کی جارہی ہے۔ جس کی کانگریس مذمت کرتی ہے۔ قومی سطح پر دلتوں کی جانب سے کئے جانے والے احتجاج کی تلنگانہ کانگریس تائید کرتی ہے۔ صدر کانگریس راہول گاندھی نے بھی دلتوں کی تحریک کی تائید کی ہے۔ اتم کمار ریڈی نے کہاکہ تلنگانہ میں دلت اور قبائیلی طبقہ غیر محفوظ ہے۔

انتخابات سے قبل کے سی آر قبائیلی طبقہ کو 12 فیصد تحفظات اور دلت طبقات میں 3 ایکر اراضی تقسیم کرنے، دلت خاندان میں ایک نوجوان کو سرکاری ملازمت فراہم کرنے ڈبل بیڈ روم مکانات فراہم کرنے اور دیگر کئی وعدے کئے تھے۔ 4 سال گزرنے کے باوجود ان پر عمل آوری میں حکومت ناکام ہوگئی ہے۔ ریاست میں دلتوں پر مظالم میں اضافہ ہوگیا ہے۔ منتھنی میں مدھوکر نامی دلت کا بے رحمانہ قتل کیا گیا۔ ایک سال گزرنے کے باوجود خاطیوں کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی اور نہ ہی پوسٹ مارٹم رپورٹ کو منظر عام پر لایا گیا۔ انہوں نے کہاکہ ضلع سرسلہ کے نیرالہ میں ریت مافیا کے خلاف آواز بلند کرنے والے دلتوں کے خلاف تھرڈ ڈگری کا استعمال کیا گیا۔ نیرالہ متاثرین سے اظہار یگانگت کیلئے پہونچنے والی سابق اسپیکر لوک سبھا میراکمار کا ریاستی حکومت نے احترام نہیں کیا ۔ چیف منسٹر کے سی آر سابق اسپیکر کے خلاف توہین آمیز ریمارکس کئے۔ ایک اور واقعہ میں دو دلتوں نے 3 ایکر اراضی کی عدم فراہمی پر خودسوزی کی کوشش کی جس میں ایک دلت کی موت واقع ہوگئی۔ یہ واقعہ ٹی آر ایس کے رکن اسمبلی کی قیامگاہ کے سامنے پیش آیا۔ اتم کمار نے کہاکہ کانگریس واحد جماعت ہے جو سماج کے تمام طبقات بالخصوص دلتوں کے ساتھ انصاف کرتی ہے اور ان کی ترقی و بہبود کیلئے اقدامات کرتی ہے۔ انھوں نے سابق ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر ٹی راجیا کی توہین کا حوالہ دیا جنھیں بغیر کسی ثبوت کے ڈپٹی چیف منسٹر کے عہدے اور وزارت سے برطرف کردیا گیا اور تلنگانہ کابینہ میں ایک بھی مادیگا اور مالا وزیر نہیں ہے۔ کانگریس کے ایک دلت رکن اسمبلی سمپت کمار کی رکنیت منسوخ کردی گئی۔ ایس سی ۔ ایس ٹی سب پلان کے تحت مختص فنڈس میں 50 فیصد فنڈس بھی خرچ نہ کرنے کا سی اے جی رپورٹ میں انکشاف ہوا ۔ ڈاکٹر امبیڈکر سے موسوم پرنہتا چیوڑلہ پراجکٹ کے نام کو تبدیل کرکے کالیشورم رکھا گیا۔ کانگریس قائد سابق مرکزی وزیر ایس جئے پال ریڈی، قائد اپوزیشن کونسل محمد علی شبیر، سابق وزراء سریدھر بابو، ڈی کے ارونا، ارکان اسمبلی ریونت ریڈی، رام موہن ریڈی و دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT