Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے اونگول ایم پی سرینواسلو ریڈی تلگودیشم میں شامل

کانگریس کے اونگول ایم پی سرینواسلو ریڈی تلگودیشم میں شامل

حیدرآباد ۔ 15 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز) : رکن پارلیمنٹ کانگریس مسٹر سرینواسلو ریڈی جو پارلیمانی حلقہ اونگول کی نمائندگی کرتے ہیں نے آج صدر تلگو دیشم مسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے ان کی قیام گاہ پر ملاقات کرتے ہوئے تلگو دیشم پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی ۔ مسٹر نائیڈو نے اس موقعہ پر موجود مسٹر ایم سرینواسلو ریڈی کے حامیوں کی بڑی تعداد سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تلگو دیشم پارٹی حکمرانی سے زیادہ عوام کی معاشی و تعلیمی ترقی کو یقینی بنانے پر یقین رکھتی ہے ۔ انہوں نے تلگو دیشم میں شمولیت اختیار کرنے والے قائدین کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی جذبہ خدمت سے سرشار قائدین و کارکنوں کو بہتر عہدے دینے میں کوئی تامل نہیں کرے گی ۔ مسٹر نائیڈو نے بتایا کہ ریاست کی ہمہ جہت ترقی کو یقینی بنانے کا منصوبہ تلگو دیشم عوام کے درمیان رکھ چکی ہے اب یہ قائدین و کارکنوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ عوام کے درمیان پہنچ کر شعور اجاگر کریں ۔ رکن پارلیمنٹ مسٹر ایم سرینواسلو ریڈی نے اس موقعہ پر موجود ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کے دوران کہا کہ کانگریس نے نہ صرف آندھرا پردیش کے عوام کو دھوکہ دیا ہے بلکہ ملک بھر کے عوام کو کانگریس نے پریشانیوں میں مبتلا کردیا ہے ۔ مسٹر سرینواسلو ریڈی نے بتایا کہ اسکامس ، بدعنوانیوں و بے قاعدگیوں کے واقعات کے بعد اب ریاست کی تقسیم کے مسئلہ پر کانگریس عوامی مفادات کو پیش نظر رکھتے ہوئے فیصلہ کرنے میں ناکام ہوچکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بدعنوانیوں کے واقعات میں کانگریس اعلیٰ قیادت کے ملوث ہونے کی اطلاعات کے ساتھ ہی وہ کانگریس کے مستقبل سے مایوس ہوگئے تھے اور اب تک اس تذبذب کا شکار تھے کہ آیا جائیں تو کہاں جائیں ؟ یا سیاسی زندگی سے سنیاس لے لیں ؟ لیکن جب تلگو دیشم پارٹی نے دونوں ریاستوں کی ترقی کا منصوبہ پیش کیا اور دونوں ریاستوں کے ساتھ مساوی انصاف کا نظریہ پیش کیا تو انہوں نے تلگو دیشم پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ۔ انہوں نے بتایا کہ انہیں مسٹرین چندرا بابو نائیڈو کی قیادت پر مکمل بھروسہ ہے اور وہ ان کی قیادت میں تلگو دیشم پارٹی کے توسط سے عوامی خدمت کا سلسلہ جاری رکھیں گے ۔ آئندہ انتخابات میں حصہ لینے کے متعلق فیصلہ پر پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ انتخابی ٹکٹ دینا یا نہ دینا پارٹی قیادت کا اختیار ہے ۔ مسٹر سرینواسلو نے کہا کہ اگر پارٹی انہیں ٹکٹ دیتی ہے تو وہ مقابلہ کریں گے اور اگر پارٹی انہیں ٹکٹ نہیں دیتی ہے تو ایسی صورت میں پارٹی کیڈر کے ساتھ امیدوار کو کامیاب بنانے کے لیے جدوجہد کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT