Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے بی فارمس سے محروم قائدین کا احتجاج

کانگریس کے بی فارمس سے محروم قائدین کا احتجاج

سابق مرکزی وزیر ستیہ نارائنا کا پتلا نذر آتش ، گاندھی بھون کچھ دیر مقفل
حیدرآباد ۔ 22 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : کانگریس پارٹی میں بی فارمس سے محروم ہونے والے کئی قائدین نے آج بھی گاندھی بھون پہونچ کر احتجاج کیا ۔ ٹکٹ فروخت کرنے کا سینئیر قائدین پر الزام عائد کیا ۔ سابق مرکزی وزیر سروے ستیہ نارائنا کا پتلا نذر آتش کیا گیا ۔ کیپٹن اتم کمار ریڈی ، ملوبٹی وکرامارکا اور محمد علی شبیر کے خلاف نعرے بازی کی گئی پرچہ نامزدگی سے دستبرداری کی مہلت ختم ہوجانے کے باوجود کانگریس میں ٹکٹ کے دعویداروں کی ناراضگی ابھی ختم نہیں ہوئی ہے ۔ کانگریس کے کئی قائدین اپنے اپنے حامیوں کے ساتھ گاندھی بھون پہونچ کر احتجاج کیا ۔ پارٹی کارکنوں کی ناراضگی کو دیکھتے ہوئے گاندھی بھون کے انتظامیہ نے کچھ دیر کے لیے گاندھی بھون کو مقفل کردیا ۔ ملکاجگیری بلدی حلقہ ٹکٹ کے دعویدار گوتم نے آج اپنے حامیوں کے ساتھ گاندھی بھون پہونچ کر انہیں ٹکٹ سے محروم کرنے پر احتجاج کیا ۔ سابق مرکزی وزیر سروے ستیہ نارائنا پر 30 لاکھ روپئے حاصل کرتے ہوئے وائی ایس آر کانگریس پارٹی سے کانگریس میں شامل ہونے والی جیوتی نائیڈو کو ٹکٹ دینے کا الزام عائد کرتے ہوئے گاندھی بھون کے احاطے میں سروے ستیہ نارائنا کا پتلا نذر آتش کیا ۔ اس کے علاوہ کانگریس کی مہیلا قائدین پاروتی شرما ، شوبھا رانی ، رینوکا ، شانتا سریواستو نے اپنے اپنے حامیوں کے ساتھ گاندھی بھون پہونچ کر انہیں ٹکٹ سے محروم کرنے کے خلاف احتجاج کیا ۔ ان مہیلا قائدین نے پہلے طمانیت ملنے کے بعد پارٹی ٹکٹ سے محروم کرنے کا صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی ورکنگ پریسیڈنٹ بٹی ملو وکرامارکا اور قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر کے خلاف الزامات عائد کرتے ہوئے ان کے خلاف نعرے بازی کی اور ٹکٹس فروخت کرتے ہوئے دوسری جماعتوں سے خفیہ ساز باز کرنے کا بھی الزام عائد کیا ۔ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے جنرل سکریٹری مسٹر کمار راؤ نے احتجاج کرنے والی مہیلا قائدین سے بات چیت کرتے ہوئے انہیں احتجاج سے دستبردار کرایا ۔۔

TOPPOPULARRECENT