Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / کانگریس کے چلو اسمبلی پروگرام کو حکومت سے ناکام بنانے کی سازش

کانگریس کے چلو اسمبلی پروگرام کو حکومت سے ناکام بنانے کی سازش

حالات کی خرابی پر حکومت ذمہ دار ، صدر پی سی سی تلنگانہ اتم کمار ریڈی کا بیان
حیدرآباد ۔ 25 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے 27 اکٹوبر کو کانگریس کی جانب سے منظم کئے جانے والے چلو اسمبلی احتجاج کو ناکام بنانے کی سازش کرنے کا حکومت پر الزام عائد کیا ۔ اگر حالت خراب ہوتے ہیں اس کی ساری ذمہ داری چیف منسٹر پر عائد ہونے کا دعویٰ کیا ۔ کانگریس کے اقتدار حاصل کرنے کے بعد یکمشت میں کسانوں کے 2 لاکھ روپئے تک قرضے معاف کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ آج گاندھی بھون میں کسان کھیت مزدور کے اجلاس میں شرکت کرنے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر نے اسمبلی اور کونسل میں کسانوں کی فلاح و بہبود کے لیے جو وعدے کئے تھے ۔ آج تک اس کو عملی جامہ نہیں پہنایا گیا ۔ کانگریس کی جانب سے 27 اکٹوبر کو کسانوں کے مسائل پر منظم کیے جانے والے چلو اسمبلی احتجاجی پروگرام سے حکومت خوفزدہ ہے اور احتجاجی پروگرام کو ناکام بنانے کے لیے حکومت کی جانب سے سازش رچی جارہی ہے ۔ پولیس کا بیجا استعمال کرتے ہوئے احتجاجی ریالی میں شرکت کرنے والے قائدین اور کارکنوں کو گھروں پر نظر بند کرنے یا اضلاعی سرحدوں پر انہیں گرفتار کرنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں ۔ جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے ۔ پرامن جمہوری انداز میں منظم کیے جانے والے احتجاج کو روکنے کی کوشش کی گئی تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے اور اس کی ساری ذمہ داری چیف منسٹر اور حکومت پر عائد ہوگی ۔ ٹی آر ایس کے دور حکومت میں زرعی شعبہ بحران کا شکار ہوگیا اور ریاست میں 3500 کسان خود کشی کرچکے ہیں ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ 2019 کے عام انتخابات میں کانگریس پارٹی بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کرے گی اور کسانوں کے 2 لاکھ روپئے تک کے قرضہ جات یکمشت میں معاف کردئیے جائیں گے ۔ چاول اور جوار کو 2 ہزار روپئے فی کنٹل اقل ترین قیمت فراہم کی جائے گی ۔ کپاس کی کاشت کو 5 ہزار روپئے اقل ترین قیمت ادا کی جائے گی ۔ زرعی انشورنس کی رقم کسانوں پر بوجھ عائد کئے بغیر حکومت خود ادا کرے گی ۔ اتم کمار ریڈی نے کہا کہ گذشتہ سال 7.5 لاکھ کسانوں نے انشورنس کی رقم ادا کی ہے ۔ لیکن فصلوں کے نقصانات کی انہیں کوئی پابجائی نہیں کی گئی ہے ۔ ٹی آر ایس حکومت مختلف وعدے کرتے ہوئے عوام کو ہتھیلی میں جنت دیکھا رہی ہے ۔ اقتدار حاصل کرنے یا کام نکل جانے کے بعد اس کو فراموش کررہی ہے جس کی ٹی آر ایس کو قیمت چکانی پڑے گی ۔ ریاست کے عوام ٹی آر ایس کو کبھی معاف نہیں کریں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT