Tuesday , December 18 2018

کبوتر پالنے پر لڑکوں کو عسکریت پسندوں نے ہلاک کردیا

لندن ۔ 21جنوری۔(سیاست ڈاٹ کام) دولت اسلامیہ عسکریت پسندوں نے 15لڑکوں کا اغواء کرلیااور اُن میں سے 16 تا 22 سال کی عمر کے تین لڑکوں کو موت کے گھاٹ اُتار دیا ۔ یہ واقعہ عراق میں رونما ہوا جہاں عسکریت پسندوں نے انھیں صرف اس لئے ہلاک کردیا کیونکہ لڑکے کبوتر پالا کرتے تھے جو عسکریت پسندوں کے مطابق ایک غیراسلامی فعل تھا۔ اخبار میرر کے مطابق ای

لندن ۔ 21جنوری۔(سیاست ڈاٹ کام) دولت اسلامیہ عسکریت پسندوں نے 15لڑکوں کا اغواء کرلیااور اُن میں سے 16 تا 22 سال کی عمر کے تین لڑکوں کو موت کے گھاٹ اُتار دیا ۔ یہ واقعہ عراق میں رونما ہوا جہاں عسکریت پسندوں نے انھیں صرف اس لئے ہلاک کردیا کیونکہ لڑکے کبوتر پالا کرتے تھے جو عسکریت پسندوں کے مطابق ایک غیراسلامی فعل تھا۔ اخبار میرر کے مطابق ایک کسان نے بتایا کہ اُس کے بیٹے کو دولت اسلامیہ عسکریت پسندوں نے گھر میں گھس کر باہر گھسیٹ کر نکالا اور اپنے ساتھ لے گئے جبکہ مشرقی صوبہ دیالا میں 15 لڑکوں کا اغواء کیا گیا جن میں سے تین لڑکوں کو گولی مار دی گئی ۔ کسان نے بتایا کہ اُس کے بیٹے کو لیجانے سے قبل اُنھوں نے تمام کبوتروں کو ایک تھیلے میں ڈال کر آگ لگادی ۔ دوسری طرف ایک عراقی عہدیدار نے بتایا کہ دولت اسلامیہ عراق اور شام میں لڑائی کے لئے اپنی صفوں میں افرادی قوت میں اضافہ کی خواہاں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT