Wednesday , January 17 2018
Home / ہندوستان / کجریوال محاذ آرائی کی راہ پر، جن لوک پال بل آج پیش کرنے بضد

کجریوال محاذ آرائی کی راہ پر، جن لوک پال بل آج پیش کرنے بضد

نئی دہلی ۔ 12 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مرکز کے ساتھ محاذ آرائی کا راستہ اختیار کرتے ہوئے اروند کجریوال حکومت نے کل دہلی اسمبلی میں جن لوک پال بل پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت نے مرکزی وزارت قانون کی اس رائے کو نظرانداز کردیا کہ بل پیش کرنے سے قبل مرکز کی منظوری ضروری ہے۔ عام آدمی پارٹی حکومت کا یہ سخت موقف اس وقت سامنے آیا جبکہ کانگریس

نئی دہلی ۔ 12 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مرکز کے ساتھ محاذ آرائی کا راستہ اختیار کرتے ہوئے اروند کجریوال حکومت نے کل دہلی اسمبلی میں جن لوک پال بل پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت نے مرکزی وزارت قانون کی اس رائے کو نظرانداز کردیا کہ بل پیش کرنے سے قبل مرکز کی منظوری ضروری ہے۔ عام آدمی پارٹی حکومت کا یہ سخت موقف اس وقت سامنے آیا جبکہ کانگریس اور بی جے پی دونوں نے اس طرزعمل کو غیردستوری قرار دیا۔ حکومت کے سینئر عہدیدار نے کہا کہ ہمارے موقف کے بارے میں نظرثانی کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ ہم جن لوک پال بل پروگرام کے مطابق کل پیش کریں گے۔ مرکزی وزارت قانون نے یہ رائے دی ہیکہ دہلی حکومت کے مقننہ امور اسی وقت دستوری کہلائیں گے جب اسے منظوری سے قبل مرکز کی رضامندی حاصل ہو۔ لیفٹننٹ گورنر نجیب جنگ نے پیر کو اس پیچیدہ مسئلہ پر وزارت قانون کی رائے طلب کی تھی۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ جن لوک پال بل کل ایوان میں پیش کیا جارہا ہے۔ اسمبلی کا 4 دن کا سیشن جن لوک پال اور سوراج بل کی منظوری کیلئے منعقد کیا جارہا ہے۔

عام آدمی پارٹی حکومت نے سیشن کا آخری دن اندرا گاندھی انڈور اسٹیڈیم میں منعقد کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ چیف منسٹر اروند کجریوال کا یہ موقف ہیکہ مرکز سے قبل از وقت منظوری حاصل کرنے کی کوئی ضرورت نہیں۔ بی جے پی اور کانگریس کی یہ رائے ہیکہ مقننہ امور کے قواعد کے تحت یہ منظوری ضروری ہے۔ عام آدمی پارٹی حکومت نے دہلی اسمبلی کا خصوصی سیشن اسٹیڈیم میں منعقد کرنے کے فیصلہ پر نظرثانی کرنے لیفٹننٹ گورنر نجیب جنگ کی درخواست مسترد کردی۔ وزیر تعلیم منیش سیسوڈیا نے کابینہ کے اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر نے فیصلہ پر نظرثانی کی درخواست کی تھی، آج کابینہ میں اس پر دوبارہ غور کیا گیا اور یہ فیصلہ کیا گیا کہ اسٹیڈیم میں ہی یہ سیشن منعقد کیا جائے۔ اس دوران دہلی کانگریس صدر اروندر سنگھ لولی نے کہا کہ چیف منسٹر اروند کجریوال خود اپنے لئے ایسے حالات بنا رہے ہیں کہ انہیں حکومت چھوڑنے کیلئے مجبور ہونا پڑے۔

TOPPOPULARRECENT